ورلڈ پروٹسٹ

غزہ میں اسرائیلی جارحیت کیخلاف دنیابھرمیں احتجاج جاری ہے۔ لندن۔ کینیڈا۔اسپین۔فرانس۔ناروے اور بنگلہ دیش میں ریلیاں نکالی گئیں۔ مظلوم فلسطینیوں پر مظالم کے خلاف برطانیہ، یورپ اور امریکا میں مظاہرےغزہ پر جاری بمباری اور نہتے شہریوں کی شہادت پر احتجاج کیا گیا۔امریکا کے دارالحکومت واشنگٹن میں بڑا مظاہرہ کیا گیا، اسرائیل کے خلاف اور فلسطین کےحق میں نکلنے والی ریلی شہر کی مختلف سڑکوں سے گزری۔ شرکا نے بڑی تعداد میں فلسطینی پرچم اٹھا رکھے تھے۔مظاہرین نے نیویارک کےویریزانو برج کوبلاک کردیا،،جس کےباعث پولیس اور مظاہرین میں جھڑپ بھی ہوئی شکاگو،لاس ویگاس،بروکلین،ہوسٹن،کیلیفورنیا سمیت دیگرشہروں میں بھی عوام سڑکوں پرآگئے جرمن شہر برلن میں ہزاروں افراد نے اسرائیلی بربریت کے خلاف مظاہرہ کیا، لوگوں نے بائیکاٹ اسرائیل کے نعرے بھی لگائے۔ چند یہودیوں نے پرامن احتجاج کو سبوتاژ کرنے کی بھی کوشش کی۔لندن کے ماربل آرچ سے ہزاروں مظاہرین فلسطینی پرچم لہراتے سڑکوں پر نکل آئے، مظاہرین میں خواتین اور بچوں سمیت ہر عمر کے افراد موجود تھے، مظاہرین فلسطینیوں پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف شدید نعرے بازی کرتے رہے۔آسٹریا میں بھی شہری اسرائیلی بربریت کے خلاف سڑکوں پر نکلے، پولیس نے چند مظاہرین کو دھر لیا۔کینیڈا۔ اسپین اور بنگلہ دیش میں بھی لوگوں کی بڑی تعداد نے فلسطینیوں سے اظہاریکجہتی کرتے ہوئے احتجاج کیا۔ مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ عالمی برادری اسرائیلی فورسز کی جارحانہ کارروائیاں روکوانے کے لیے فوری اقدامات کرے۔

متحدہ عرب امارات نے اسرائیل پر پابندی عائد کی

امریکی اور یورپی کمپنیوں کے بعد متحدہ عرب امارات کی فضائی کمپنیوں اتحاد ایئر ویز اور فلائی دبئی نے بھی اسرائیل جانے والی پروازیں منسوخ کردیں۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق متحدہ عرب کی فضائی کمپنیوں اتحاد اور فلائی دبئی نے تل ابیب جانے والی مسافر بردار اور مال بردار پروازوں کو منسوخ کردیا۔ اس سے قبل امریکی اور یورپی فضائی کمپنیوں نے بھی تل ابیب کے لیے اپنی پروازوں کو منسوخ کردیا تھا۔دونوں کمپنیوں کی آج چار پروازیں شیڈول تھیں جب کہ فلائی دبئی نے حال ہی میں اسرائیل کے لیے پروازوں کا آغاز کیا تھا۔ پروازوں کی منسوخی کی وجہ نہیں بتائی تاہم یہ فیصلہ اسرائیل کی غزہ میں بمباری اور پُرتشدد کارروائیوں میں اضافے کے بعد لیا گیا ہے۔
واضح رہے کہ غزہ پر اسرائیلی بمباری کا سلسلہ ساتویں روز بھی جاری ہے اور میڈیا ہاؤسز تک کو راکٹ حملے میں تباہ کردیا گیا ہے، فضائی بمباری میں مجموعی ہلاکتوں کی تعداد 170 سے تجاوز کرگئی ہے جب کہ جواب میں حماس نے بھی اسرائیلی علاقوں کو نشانہ بنایا ہے۔

پاکستانی ملیشیا

پاکستان اور ملائیشیا نے مسجد اقصیٰ میں بے گناہ نمازیوں پر حملوں کو شرمناک قرار دیا ہے وزیراعظم عمران خان کوملائیشیا کے سابق وزیراعظم مہاتیر محمد نے فون کیا ، دونوں رہنماؤں نےایک دوسرےکوعید کی مبارکباد دی ،گفتگو میں فلسطین کی سنگین صورتحال پرتبادلہ خیال کیا گیا، دونوں رہنماؤں نے غزہ پراسرائیلی میزائل حملوں کی مذمت کی اوراتفاق کیا کہ فلسطینیوں کی حفاظت اوریواین قراردادوں پرسمجھوتہ نہیں ہوناچاہیے،عالمی برادری جارحیت روکنےکےلیے اقدامات کرے

معلومات

قینچی سے بال کاٹنا تو آپ نے دیکھا ہوگا مگر کیا کبھی آپ نے چاپڑ سے بال کاٹٹے دیکھا ہے،لاہور سے تعلق رکھنے والے علی عباس قینچی کے بجائے لوگوں کے بال آگ، ٹوٹے ہوئے گلاس اور گوشت کاٹنے والے چاپڑ سے تراشتے ہیں دیکھئے اس رپورٹ میں
علی عباس شروع سے ہی نئے اور منفرد آئیڈیاز متعارف کروانے کے شوقین رہے ہیں، یہی وجہ ہے کہ ایک دن ان کے دماغ میں اس کا آئیڈیا آیا جس پر کام شروع کیا۔آگ سے بال تراشنے کے لیے علی بلو ٹارچ کا استعمال کرتے ہیں جو عام طور پر اسٹیل کی شکل تبدیل کرنے یا میٹل کو مختلف انداز میں ڈھالنے کے کام آتی ہے، ساتھ ہی ان کے ہاتھ میں کٹنگ بورڈ بھی موجود ہوتا ہے جسے بالوں سے لگا کر وہ اندازے کے مطابق بال کاٹتے ہیں۔

انڈونیشیا

انڈونیشیا میں سیلفی لینے کی کوشش کے دوران کشتی الٹ گئی جس کے نتیجے میں 7 افراد ڈوب کر ہلاک ہوگئے۔ ریسکیو اداروں کے غوطہ خوروں نے 11 افراد کو بحفاظت نکال لیا جب کہ 7 افراد کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں جب کہ 2 افراد لاپتہ ہیں۔
عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق انڈونیشیا کے جاوا جزیرے میں 20 سیاح کشتی کی ایک جانب جمع ہو کر سیلفی لے رہے تھے جس کی وجہ سے کشتی توازن برقرار نہ رکھ سکی اور الٹ گئی۔ ریسکیو اداروں کے غوطہ خوروں نے 11 افراد کو بحفاظت نکال لیا جب کہ 7 افراد کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں جب کہ 2 افراد لاپتہ ہیں۔ واقعے کی تحقیقات کے لیے انکوائری کمیٹی تشکیل دیدی گئی ہے۔
پولیس کا کہنا ہے کہ کشتی میں گنجائش سے زیادہ افراد کا سوار ہونا تھا جب کہ کشتی کو ایک 13 سالہ بچہ چلا رہا تھا۔ 17 ہزار سے زائد جزیروں والا ملک انڈونیشیا میں کشتی حادثات کے واقعات عام ہیں۔واضح رہے کہ رواں برس اپریل میں اسی جزیرے میں ماہی گیروں کی کشتی ٹکرانے کے بعد 30 افراد ڈوب گئے تھے جن میں صرف 17 کی لاشیں نکال جاسکی تھیں لیکن 13 افراد کا کوئی پتہ نہیں چل سکا تھا۔

غزہ فورکس

غزہ میں اسرائیلی فورسز کی دہشت گردی جاری ہے۔ اسرائیلی جنگی طیاروں کی تازہ بمباری میں مزید سینتیس نہتے فلسطینی شہید ہوگئے۔ ایک ہفتے کے دوران شہید ہونےوالے افراد کی تعداد ایک سوبانوے ہوگئی۔ شہدا میں اٹھاون بچے اور چونتیس خواتین بھی شامل ہیں۔ ایک ہزار سے زائد زخمی مختلف اسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔ غزہ شہر ملبے کا ڈھیر بن چکاہے۔ عالمی میڈیا ہاوسزاور رہائشی عمارتیں تباہ ہوچکی ہیں۔ مظلوم فلسطینی مدد کےلیے دنیا کی طرف دیکھ رہے ہیں لیکن تاحال عالمی برداری کی جانب سے اسرائیل کو لگام ڈالنے کے لیے کوئی ٹھوس اقدامات سامنے نہیں آئے۔ بے قابو اسرائیلی فورسز کو لگام نہ ڈالی جاسکی۔ غزہ میں وقفے وقفے سے خوفناک بمباری جاری ہے۔اسرائیلی فورسز نے عالمی میڈیا کے دفاتر کو بھی نہ بخشا۔کئی میڈیا دفاتر پر بم برسادییے۔ رہائشی عمارتیں بھی ملبے کا ڈھیر بن گئیں۔ غزہ میں ہر طرف چیخ و پکار سنائی دی۔اسرائیلی فضائیہ نے رات گئے حماس رہنما کے گھر پر حملہ کر کے ایک اور عمارت کو بھی زمین بوس کر دیا۔ کئی ٹن وزنی دھماکاخیز مواد برسا کر ایک سرنگ بھی تباہ کردی۔غیرملکی خبرایجنسی کے مطابق غزہ میں ایک ہفتے کے دوران ایک ہزار سے زائد گھر اور رہائشی و سرکاری عمارتیں تباہ کی جاچکی ہیں ۔ غزہ میں غذائی قلت کا بحران بھی سر اٹھانے لگا ہے۔ہزاروں فلسطینی بے گھر ہوچکے ہیں۔ اسرائیلی دہشت گردی کے باوجود غزہ کےعظیم فرزندنے شہیدمسجدکے مینارپرکھڑے ہوکراذان دی۔غزہ میں دس سالہ فلسطینی بچی نےعالمی ضمیر کو جنجھوڑ کر رکھ دیا،، نم انکھوں سے کہا اسرائیل نے فلسطینی بچوں کے خواب کچل ڈالے ،، ہماری زندگیاں اجیرن ہوچکی ہیں،حماس کے رہنما اسماعیل ہنیہ نے قطر میں کارکنوں اور حامیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیت المقدس ہم سب کی ذمہ داری ہے۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے غزہ میں عام شہریوں کی شہادت پر افسوس اور میڈیا ہاؤسز پر اسرائیلی حملے پر تشویش کا اظہارکیا ہے۔مغربی کنارے میں بیت اللحم سمیت کئی شہروں میں فلسطینیوں نے مظاہرے کئے، مظاہرین پر اسرائیلی فورسز نے طاقت کا بے دریغ استعمال کیا۔ صیہونی فورسز نے نوجوانوں پر فائرنگ کر دی جس سے متعدد افراد زخمی ہو گئے۔ اسرائیلی فوجیوں نے میڈیا کے نمائندوں کوبھی دھکے دیئے۔

ایاز خان

اداکارہ عائزہ خان 9 ملین یعنی 90 لاکھ فالوورز کے ساتھ انسٹاگرام پر سب سے زیادہ فالوورز رکھنے والی اداکارہ بن گئیں۔
اداکارہ عائزہ خان نے گزشتہ روز سوشل میڈیا ایپ انسٹاگرام پر اپنی ایک تصویر شیئر کی جس میں انہوں نے اپنے مداحوں کو بتایا کہ انسٹاگرام پر ان کے 9 ملین یعنی 90 لاکھ فالوورز ہوگئے ہیں اور اس کے ساتھ ہی عائزہ نے انہیں فالو کرنے والے تمام لوگوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے تمام فالوورز سے بے حد محبت کرتی ہیں۔واضح رہے کہ اداکارہ عائزہ خان پہلی پاکستانی ادکارہ ہیں جن کے انسٹاگرام پر 90 لاکھ فالوورز ہوئے ہیں۔ اس سے قبل اداکارہ ایمن خان انسٹاگرام پر سب سے زیادہ فالوورز رکھنے والی اداکارہ تھیں لیکن حالیہ چند دنوں میں عائزہ خان کے فالوورز کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے اور وہ انسٹاگرام پر سب سے زیادہ فالوکی جانے والی اداکارہ بن گئی ہیں۔

10 سالہ فلسطینی لڑکی کا رد عمل

دس سالہ فلسطینی بچی کی فریاد نے پتھر دل بھی پگھلادیے۔۔ غزہ میں اسرائیلی بمباری سے تباہ گھر کے ملبے کے ڈھیر پر کھڑی بچی کا کہنا ہے کہ میں چاہتی ہوں کہ میں اپنے لوگوں کیلئے کچھ کروں مگر میں کیا کر سکتی ہوں؟ میں تو صرف دس سال کی ایک بچی ہوں۔۔ دس سالہ بچی کی ویڈیو نے سب کے دل دہلا دیے ہیں 10 سالہ فلسطینی بچی کی عالمی برادری سے فریاد میں چاہتی ہوں کے اپنے لوگوں کے لئے کچھ کروں میں کیا کرسکتی ہوں،میں تو 10سال کی بچی ہوں بچی کی ویڈیو نے سوشل میڈیا صارفین کی دل دہلادیئے

سعودی ایڈ چینڈ

متحدہ عرب امارات نے بھی ماہ شوال کے چاند کا اعلان کردیا۔ سرکاری اعلان کے مطابق متحدہ عرب امارات میں عید جمعرات 13 مئی کو ہوگی۔اماراتی حکومت کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ امارات میں کہیں بھی عید کا چاند نظر نہیں آیا جس کے بعد کل 30 واں روزہ ہوگا۔
سرکاری اعلان کے مطابق متحدہ عرب امارات میں عید جمعرات 13 مئی کو ہوگی۔
دوسری جانب سعودی عرب میں بھی چاند نظر نہیں آیا جس کے بعد عید الفطر جمعرات 13 مئی کو ہوگی

مساجد ایکسہ اسرائیل

مسجد اقصیٰ پر حملے کے بعد بھی اسرائیل کی مسلم دشمنی کم نہ ہوئی۔ منگل کی صبح صہیونی فورسز نے جنگی طیاروں کے ذریعے غزہ پر پھر بم برسادئیے۔خوفناک بمباری میں اب تک دس بچوں سمیت تیس بے گناہ فلسطینی شہید اور ایک سو پچیس سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔ اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے حماس کے ایک سو تیس ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جن میں پندرہ حماس کمانڈرز مارے گئے ہیں۔اسرائیلی وزیراعظم نے غزہ پر حملے جاری رکھنے کی بھی دھمکی دی ہے۔ فلسطینی صدر محمود عباس نے اسرائیلی حملوں کی مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے اسرائیلی جرائم روکنے کےلیے فوری اقدامات کا مطالبہ کیاہے۔ اسرائیلی فورسز بے لگام ۔۔ بین الاقوامی مذمت نظرانداز مسجد اقصیٰ میں سیکڑوں فلسطینیوں کو زخمی کرنے کے بعد غزہ پرخوفناک بمباری ،منگل کی صبح حملے میں خان یونس ، البوریج کیمپ اور الزیتون کے علاقوں کو نشانہ بنایاگیاشمالی غزہ میں ایک دھماکے میں تین بچوں سمیت ایک ہی خاندان کے سات افراد شہید ہوگئےاسرائیلی حملوں میں حماس سے وابستہ فلاحی تنظیم کے زیر انتظام چلنے والے ایک اسکول کو وسطی غزہ کے علاقے دیر البلح میں نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں وہ مکمل طور پر تباہ ہوگیا۔اسرائیلی فضائی حملوں میں مشرقی غزہ میں ایک پلاسٹک فیکٹری کوبھی نشانہ بنایا گیا۔غزہ کی پٹی اورخان یونس پر لاتعداد گھروں اور اپارٹمنٹس کو اسرائیلی طیاروں نے بمباری کرکے تباہ کردیا۔ ترک خبر رساں ایجنسی اناطولوکے مطابق اسرائیلی آرمی کا دعویٰ ہے کہ انہوں نے حماس کے 130 ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جن میں 15 حماس کمانڈرز مارے گئے ہیں۔
فلسطینی صدرمحمودعباس نے غزہ پر اسرائیلی حملوں کی مذمت کی ہے اور عید کی تقریبات منسوخ کردیں ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ عالمی برادری فلسطینیوں کےخلاف اسرائیلی جرائم روکنے کےلیے فوری اقدامات کرے۔

غزہ کو خون میں نہلا دینے والے اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو اب بھی بس کرنے کو تیار نہیں۔۔ انہوں نے حماس کی جوابی کارروائیوں پر غزہ میں مزید کچھ دن حملے جاری رکھنے کی دھمکی بھی دیدی ہے۔