ماہرین کا کہنا ہے کہ

ماہرین کا کہنا ہے کہ ویکسی نیشن کے بعد کووڈ 19 کی سنگین شدت کا خطرہ نہ ہونے کے برابر ہوتا ہے، مگر خواتین کے مقابلے میں مردوں میں اس کا امکان زیادہ ہوتا ہے۔ یہ تحقیق اسکاٹ لینڈ میں کی گئی تھی۔

اسکاٹ لینڈ میں ویکسی نیشن کے بعد کووڈ 19 کے خطرے کے حوالے سے قومی سطح پر پہلی تحقیق کی گئی۔تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ جزوی ویکسی نیشن کرانے والے 0.07 فیصد جبکہ مکمل ویکسی نیشن کرانے والے 0.06 فیصد افراد بریک تھرو انفیکشن کی تشخیص ہوئی۔تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ دسمبر 2020 سے اپریل 2021 کے دوران جزوی ویکسی نیشن کرانے والے ہر 2 ہزار میں سے ایک جبکہ مکمل ویکسی نیشن کرانے والے ہر 10 ہزار میں سے ایک فرد کو بریک تھرو انفیکشن کے بعد بیماری کی سنگین شدت کا سامنا ہوا۔ مگر خواتین کے مقابلے میں مردوں میں اس کا امکان زیادہ ہوتا ہے ویکسی نیشن کے حوالے سے ایک اور تحقیق

آج بیس ستمبر سال 2021

آج بیس ستمبر سال 2021 سے قومی انسداد پولیو مہم کا آغاز ہورہا ہے جس میں4کروڑ سے زیادہ بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے کا ہدف ہے۔

مذکورہ مہم میں 2 لاکھ65 ہزار پولیو ورکرز گھر گھر جا کر بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائیں گے۔ انسداد پولیو پروگرام کے کو آرڈینیٹر ڈاکٹر شہزاد بیگ کا کہنا ہے کہ اس بار4کروڑ سے زائد پانچ سال سے کم عمر بچوں کو حفاظتی پولیو ڈراپس پلانے کا ہدف ہے۔

برطانیہ میں اس وقت کینسر

برطانیہ میں اس وقت کینسرکی 50 سے زائد اقسام کی ممکنہ شناخت کرنے والے خون کے ٹیسٹ کی دنیا میں سب سے بڑی آزمائش شروع ہوگئی ہے جس میں ایک لاکھ چالیس ہزار افراد حصہ لیں گے۔ یہ آزمائش نیشنل ہیلتھ سروس ( این ایچ ایس) کی جانب سے کی جارہی ہے۔

اس طرح ظاہری علامات سے پہلے ہی سرطان کی شناخت میں مدد ملے گی اور انسانی جانوں کو بچانا ممکن ہوگا۔ اس ٹیسٹ کا نام گیلیری بلڈ ٹیسٹ ہے جو گریل ان کارپوریٹڈ کمپنی کا و اضع کردہ ایک مؤثر ٹیسٹ بھی  ہے۔ خون کا ٹیسٹ مریض کے ڈی این اے کا جائزہ لیتا ہے۔ ڈی این اے میں ممکنہ خرابی کی بنا پر کینسر کی شناخت یا پھر پیشگوئی کی جاسکتی ہے۔ قبل ازوقت شناخت سے ڈرامائی انداز میں علاج آسان ہوجاتا ہے اور کئی جانیں بچائی جاسکتی ہیں۔ پچاس اقسام کے سرطان شناخت کرنے والے بلڈ ٹیسٹ کی بڑی آزمائش شروع یہ آزمائش نیشنل ہیلتھ سروس ( این ایچ ایس) کی جانب سے کی جارہی ہے

بچوں کو کورونا وائرس سے

بچوں کو کورونا وائرس سے بچانے کے لیے ویکسین لگوانا انتہائی ضروری ہے کیونکہ پاکستان میں کورونا وائرس کی وبا کے نتیجے میں اب تک 211 بچے جاں بحق ہو چکے ہیں

 جن میں اٹھارہ سے پانچ سال تک عمر کے 177 بچے شامل ہیں جبکہ ایک سال سے لے کر پانچ سال تک کی عمر کے 34 بچے اس وبا کے نتیجے میں جاں بحق ہوچکے ہیں۔ فائزر کمپنی کی میسنجر آر این اے ویکسین بچوں کو لگائی جائے گی جو کہ دنیا کے کئی ممالک میں استعمال ہو چکی ہے اور ڈیٹا سے ثابت ہوا ہے کہ یہ انتہائی محفوظ ویکسین ہے۔ کورونا ویکسین بچوں کے لیے محفوظ اور ضروری ہے، ماہرین فائزر کمپنی کی میسنجر آر این اے ویکسین بچوں کو لگائی جائے گی

بچوں کو کورونا وائرس

بچوں کو کورونا وائرس سے بچانے کے لیے ویکسین لگوانا انتہائی ضروری ہے کیونکہ پاکستان میں کورونا وائرس کی وبا کے نتیجے میں اب تک 211 بچے جاں بحق ہو چکے ہیں

 جن میں اٹھارہ سے پانچ سال تک عمر کے 177 بچے شامل ہیں جبکہ ایک سال سے لے کر پانچ سال تک کی عمر کے 34 بچے اس وبا کے نتیجے میں جاں بحق ہوچکے ہیں۔ فائزر کمپنی کی میسنجر آر این اے ویکسین بچوں کو لگائی جائے گی جو کہ دنیا کے کئی ممالک میں استعمال ہو چکی ہے اور ڈیٹا سے ثابت ہوا ہے کہ یہ انتہائی محفوظ ویکسین ہے۔ کورونا ویکسین بچوں کے لیے محفوظ اور ضروری ہے، ماہرین فائزر کمپنی کی میسنجر آر این اے ویکسین بچوں کو لگائی جائے گی

برطانیہ میں اس وقت کینسر

برطانیہ میں اس وقت کینسرکی 50 سے زائد اقسام کی ممکنہ شناخت کرنے والے خون کے ٹیسٹ کی دنیا میں سب سے بڑی آزمائش شروع ہوگئی ہے جس میں ایک لاکھ چالیس ہزار افراد حصہ لیں گے۔ یہ آزمائش نیشنل ہیلتھ سروس ( این ایچ ایس) کی جانب سے کی جارہی ہے۔

اس طرح ظاہری علامات سے پہلے ہی سرطان کی شناخت میں مدد ملے گی اور انسانی جانوں کو بچانا ممکن ہوگا۔ اس ٹیسٹ کا نام گیلیری بلڈ ٹیسٹ ہے جو گریل ان کارپوریٹڈ کمپنی کا و اضع کردہ ایک مؤثر ٹیسٹ بھی  ہے۔ خون کا ٹیسٹ مریض کے ڈی این اے کا جائزہ لیتا ہے۔ ڈی این اے میں ممکنہ خرابی کی بنا پر کینسر کی شناخت یا پھر پیشگوئی کی جاسکتی ہے۔ قبل ازوقت شناخت سے ڈرامائی انداز میں علاج آسان ہوجاتا ہے اور کئی جانیں بچائی جاسکتی ہیں۔ پچاس اقسام کے سرطان شناخت کرنے والے بلڈ ٹیسٹ کی بڑی آزمائش شروع یہ آزمائش نیشنل ہیلتھ سروس ( این ایچ ایس) کی جانب سے کی جارہی ہے

امریکی دواساز کمپنی

امریکی دواساز کمپنی موڈرنا نے فلو اور کورونا کے خلاف ایک خوراک پر مشتمل ویکسین تیار کرنے کا اعلان کردیا۔ موڈرنا کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ویکسین کی ایک ہی خوراک لگوانی پڑے گی جو بوسٹر خوراک کے طور پر بھی موثر ہوگی

امریکی دوا ساز کمپنی موڈرنا نے ایسی ویکسین تیار کرنے کا اعلان کیا ہے جس کی ایک خوراک کورونا وائرس اور فلو کے خلاف کارآمد ہوگی۔ موڈرنا کے سربراہ کا کہنا ہے کہ  کمپنی کی اولین ترجیح ہے کہ سانس کی بیماریوں کے لیے سالانہ بنیادوں پر بوسٹر ویکسین مارکیٹ میں لائی جائے جو حالات کے مطابق اپ گریڈ کی جائے۔ فلو اور کورونا کے لیے ایک ہی خوراک پر مشتمل ویکسین، کمپنی کا بڑا اعلان ایک خوراک کورونا وائرس اور فلو کے خلاف کارآمد ہوگی

امریکی دواساز کمپنی موڈرنا

امریکی دواساز کمپنی موڈرنا نے فلو اور کورونا کے خلاف ایک خوراک پر مشتمل ویکسین تیار کرنے کا اعلان کردیا۔ موڈرنا کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ویکسین کی ایک ہی خوراک لگوانی پڑے گی جو بوسٹر خوراک کے طور پر بھی موثر ہوگی

امریکی دوا ساز کمپنی موڈرنا نے ایسی ویکسین تیار کرنے کا اعلان کیا ہے جس کی ایک خوراک کورونا وائرس اور فلو کے خلاف کارآمد ہوگی۔ موڈرنا کے سربراہ کا کہنا ہے کہ کمپنی کی اولین ترجیح ہے کہ سانس کی بیماریوں کے لیے سالانہ بنیادوں پر ب ویکسین مارکیٹ میں لائی جائے جو حالات کے مطابق اپ گریڈ کی جائے۔فلو اور کورونا کے لیے ایک ہی خوراک پر مشتمل ویکسین، کمپنی کا بڑا اعلان ایک خوراک کورونا وائرس اور فلو کے خلاف کارآمد ہوگی

امریکی دواساز کمپنی

امریکی دواساز کمپنی موڈرنا نے فلو اور کورونا کے خلاف ایک خوراک پر مشتمل ویکسین تیار کرنے کا اعلان کردیا۔ موڈرنا کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ویکسین کی ایک ہی خوراک لگوانی پڑے گی جو بوسٹر خوراک کے طور پر بھی موثر ہوگی

امریکی دوا ساز کمپنی موڈرنا نے ایسی ویکسین تیار کرنے کا اعلان کیا ہے جس کی ایک خوراک کورونا وائرس اور فلو کے خلاف کارآمد ہوگی۔ موڈرنا کے سربراہ کا کہنا ہے کہ  کمپنی کی اولین ترجیح ہے کہ سانس کی بیماریوں کے لیے سالانہ بنیادوں پر بوسٹر ویکسین مارکیٹ میں لائی جائے جو حالات کے مطابق اپ گریڈ کی جائے۔ فلو اور کورونا کے لیے ایک ہی خوراک پر مشتمل ویکسین، کمپنی کا بڑا اعلان ایک خوراک کورونا وائرس اور فلو کے خلاف کارآمد ہوگی

چین میں تیار کردہ نئی ویکسین

چین میں تیار کردہ نئی ویکسین ’’زیفی ویکس‘‘ کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ یہ کورونا وائرس کی تمام اقسام کے خلاف 82 فیصد، جبکہ خطرناک ڈیلٹا ویریئنٹ کے خلاف بھی 77 فیصد مؤثر ہے۔

زیفی ویکس کا اصل تکنیکی نام ’’زیڈ ایف2001‘‘ ہے جسے چائنیز اکیڈمی آف سائنسز کے انسٹی ٹیوٹ آف مائیکرو بائیالوجی اور چونگ کنگ زیفی پروڈکٹس کے ذیلی ادارے نے مشترکہ طور پر تیار کیا ہے۔یہ نتائج وسیع پیمانے کی اُن طبّی آزمائشوں سے حاصل ہوئے ہیں جو چین اور پاکستان کے علاوہ ازبکستان، انڈونیشیا اور ایکواڈور میں 28500 افراد پر کی گئی ہیں۔ ان نتائج سے معلوم ہوا ہے کہ ناول کورونا وائرس ’’الفا ویریئنٹ‘‘ کے خلاف اس ویکسین کی اثر پذیری 93 فیصد جبکہ اب تک سامنے آنے والی، کورونا وائرس کی تمام اقسام کے خلاف 82 فیصد ہے چین کی نئی کورونا ویکسین، ڈیلٹا ویریئنٹ کے خلاف بھی 77 فیصد مؤثر زیفی ویکس کا اصل تکنیکی نام ’’زیڈ ایف2001‘‘ ہے