سماجی فاصلے، ماسک

سماجی فاصلے، ماسک کو نظر انداز کرنے اور ایس او پیز کی خلاف ورزیوں کے باعث پاکستان میں کورونا وائرس کی چوتھی لہر زور پکڑنے لگی، ملک کورونا مریضوں کے حوالے سے مرتب کی گئی فہرست میں 31 ویں نمبر پر پہنچ گیا۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے مزید 3 ہزار 689 کیسز سامنے آئے ہیں، مزید 83 افراد اس موذی وباء کے سامنے زندگی کی بازی ہار گئے، اس کے مزید 3 ہزار 755 مریض شفایاب ہو گئے، جبکہ مثبت کیسز کی شرح 6 اعشاریہ 03 فیصد ہو گئی۔ پاکستان میں کورونا وائرس سے مزید 83 ہلاکتیں مثبت کیسز کی شرح 6 اعشاریہ 03 فیصد ہو گئی

سندھ بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں

سندھ بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کے مثبت آنے کی شرح 5 اعشاریہ 91 فیصد ریکارڈ کی گئی جبکہ صوبے میں 35 افراد انتقال کر گئے۔

کراچی میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کے مثبت کیسز کی شرح 9 اعشاریہ 61 فیصد تک جا پہنچی، شہر میں 4 ہزار 129 افراد کے کورونا ٹیسٹ کیئے گئے جن میں سے 397 کیسز مثبت آئے ہیں۔حیدر آباد میں 24 گھنٹوں میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 9 اعشاریہ 88 فیصد ریکارڈ کی گئی، جبکہ وہاں 951 افراد کے کورونا کے ٹیسٹ کیئے گئے جن میں سے 94 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔ کورونا وائرس سندھ میں مزید 35 جانیں لے گیا مثبت آنے کی شرح 5 اعشاریہ 91 فیصد ریکارڈ 

CORONA

ملک میں کورونا وائرس سے مزید 74 افراد انتقال کرگئے۔ سرکاری پورٹل کے مطابق ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 8.8 فیصد رہی۔پاکستان میں کورونا کے اعداد و شمار بتانے والی ویب سائٹ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا کے 36725 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 3232 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جب کہ وائرس سے 74 ہلاکتیں ہوئیں۔سرکاری پورٹل کے مطابق ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 8.8 فیصد رہی۔
ملک میں کورونا سے اب تک مجموعی طور پر 19617 افراد انتقال کرچکے ہیں اور کل کیسز کی تعداد 880362 ہوچکی ہے جب کہ اب تک وائرس سے 792522 افراد صحتیاب بھی ہوئے ہیں۔اس کے علاوہ ملک بھر میں اب تک مجموعی طور پر 9 لاکھ 64 ہزار سے زائد افراد کو کورونا وائرس کی ویکسین لگائی جاچکی ہے۔

گورنمنٹ اسٹیٹ بینک

گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر کا کہنا ہے کہ کورونا کے دوران پاکستانی روپے کی قدر 8 سے 9 فیصد کم ہوئی۔روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر کا کہنا تھا کہ اب پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ سرپلس ہے، روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ میں ایک لاکھ 30 ہزار اکاؤنٹ کھولے گئے۔رضا باقر نے کہا کہ سب سے زیادہ ترسیلات زر سعودی عرب سے پاکستانی اپنے ملک بھیج رہے ہیں جس سے ملکی معیشت پر مثبت اثرات پڑ رہے ہیں۔

کورونا وائرس

کوروناوبا کے باعث مزید 120 افراد جاں بحق ہوگئے جب کہ 4 ہزار سے زائد مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 2 ہزار 869 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 38 ہزار 616 کورونا ٹیسٹ کئے گئے جس کے بعد مجموعی ٹیسٹس کی تعداد 12,310,87 ہوگئی ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 2 ہزار 869 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 867,438 ہوگئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک سندھ میں 2 لاکھ94 ہزار 251 ، پنجاب میں 3 لاکھ 22 ہزار 117، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 25 ہزار 392، اسلام آباد میں 78 ہزار 560، بلوچستان میں 23 ہزار 655 ، آزاد کشمیر میں 18 ہزار 056 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار 407 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک بھر میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد76 ہزار 536 ہے۔ جب کہ 4 ہزار سے زائد مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا سے مزید 104 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں جس کے بعد اب اس وبا سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد مجموعی طور پر 19 ہزار 210 ہوگئی ہے۔
این سی او سی کے مطابق کورونا سے ایک دن میں 5 ہزار 200 مریض صحت یاب ہوئے جس کے بعد صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 771,692 ہوگئی ہے۔

بھارت کوویڈ

بھارت میں ایک ہی دن میں مزید 3ہزار سات سو سے زائد افراد کرونا سے ہلاک ہوگئے،صورتحال بے قابو ہوگئی،،دریائے گنگا نے بھی لاشیں اگلنا شروع کردیں بھارت کورونا کے شکنجے سے نکل نہ سکا مودی سرکارکی لاپروائی سے کرونا بے قابو انتظامیہ کی مسلسل لاپروائی سے کرونا کی ہولناکیاں سامنے آنے لگیں ریاست بہار کے دریا گنگا نے چالیس افراد کی لاشیں اگل دیں انتظامیہ کا کہناہے گنگاکنارے سے ملنے والی لاشیں یقینی طورپرکرونا سے مرنے والوں کی ہیں بھارت میں گزشتہ چوبیس گھنٹے میں مزید تین لاکھ چھیاسٹھ ہزارسے زائدافراد کرونا کا شکاربن گئے ایک ہی دن میں مرنے والوں کی تعداد تین ہزارسات سو اڑتالیس رپورٹ کی گئی ہے۔ برطانوی میڈیا نے بھارت میں کروناپھیلاؤ کاسبب کمبھ میلے کوقراردیدیا،،رپورٹ کے مطابق ۔۔۔ میلےمیں لاکھوں افرادشریک ہوئے تھے حکومت معاملے پرسنجیدگی سےغورکرناچاہیے تھایوپی کے شہرغازی آبادمیں ہندؤں کی آخری رسومات کی ادائیگی میں مدد کے لیےمسلم کمیونٹی سامنے آگئی، ادھر اروناچل پردوس میں کروناپابندیوں پرعملدرآمدکےلئے فوج تعینات کردی گئی ہے

کورونا

ملک میں عالمی وبا کورونا سے جاں بحق افراد کی تعداد 9 ہزارسے تجاوز کرگئی۔این سی او سی کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ملک بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 113 افراد جاں بحق جب کہ 3 ہزار 84 افراد کورونا کا شکار ہوئے۔
اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا وبا سے جاں بحق افراد کی تعداد 9 ہزار سے تجاوزکرگئی جب کہ ملک میں تشویشناک مریضوں کی تعداد 13 ہے۔ملک میں گزشتہ روز38 ہزار883 ٹیسٹ کیے گئے جو کہ موجودہ وبا کے تناظرمیں کم بتائے جاتے ہیں۔ ملک بھر میں کورونا کے فعال کیسز کی تعداد 78 ہزار959 ہے۔

کورونا وائرس

کوروناکیوباکیتیسریلہراپنیپوریشدتسےملکمیںاپنےوارکررہیہےاوراسنےمزید 118 زندگیوںکےچراغبجھادیئےہیں۔ملکمیںگزشتہروزکورونامثبتکیسزکیشرح 9.29 فیصدرہی نیشنلکمانڈاینڈآپریشنسینٹرکیجانبسےجاریاعدادوشمارکےمطابقگزشتہروزملکبھرمیںکوروناکے 40 ہزار 736 ٹیسٹکیےگئےجبکہ 3 ہزار 785افرادمیںاسکیتشخیصہوئی۔ اسطرحملکمیںگزشتہروزکورونامثبتکیسزکیشرح 9.29 فیصدرہی۔
اینسیاوسیکےمطابقملکمیںکوروناکےمصدقہکیسزکیتعداد8 لاکھ 58 ہزار25 ہوگئی،پنجابمیں 3 لاکھ 17 ہزار 972،سندھمیںلاکھ 91 ہزار 668،بلوچستان 23 ہزار 324،خیبرپختونخواایکلاکھ 23 ہزار 842،اسلامآبادمیں 77 ہزار 974،آزادکشمیر 17 ہزار 866 اورگلگتبلتستانمیں 5 ہزار 380 افرادکوروناسےمتاثرہوچکےہیں۔پاکستانمیںکوروناسےامواتکیمجموعیتعداد 18 ہزار 915 تکپہنچگئی،کوروناکےسببسبسےزیادہامواتپنجابمیںہوئیہیںجہاں 9 ہزار 32 افرادجانکیبازیہارچکےہیں،سندھمیں 4 ہزار 726،خیبرپختونخوامیں 3 ہزار 588،اسلامآبادمیں 708،گلگتبلتستان میں 107،بلوچستان میں 247 اورآزادکشمیرمیںکوروناکے 507 مصدقہمریضجاںبحقہوچکےہیں۔ملکمیںاسوقتفعالکیسزکیتعداد 81 ہزار 830 ہےجنمیںسے 4903 کیحالتتشویشناکبتائیجارہیہے۔

کورونا

کوروناوبا کے باعث مزید 140 افراد جاں بحق ہوگئے جب کہ 4 ہزار سے زائد مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 44 ہزار 846 کورونا ٹیسٹ کئے گئے جس کے بعد مجموعی ٹیسٹس کی تعداد 12,101,83 ہوگئی ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 4 ہزار 298 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 850,131 ہوگئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک سندھ میں 2 لاکھ89 ہزار 646 ، پنجاب میں 3 لاکھ 14 ہزار 517، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 22 ہزار 520، اسلام آباد میں 77 ہزار 414، بلوچستان میں 23 ہزار 016 ، آزاد کشمیر میں 17 ہزار 660 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار 358 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک بھر میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد83 ہزار 699 ہے۔ جب کہ 5 ہزار سے زائد مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا سے مزید 140 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں جس کے بعد اب اس وبا سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد مجموعی طور پر 18 ہزار 677 ہوگئی ہے۔این سی او سی کے مطابق کورونا سے ایک دن میں 4 ہزار 631 مریض صحت یاب ہوئے جس کے بعد صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 747,755 ہوگئی ہے۔

کینسر صحت

امریکا میں ہونے والی ایک نئی تحقیق کے نتائج سے بریسٹ کینسر سمیت دیگر کئی اقسام کے کینسر کے علاج سے متعلق ایک نئی امید پیدا ہو گئی ہے۔ایک ریسرچ کی رپورٹ جرنل برائے نیچر پارٹنر جرنلز میں شائع ہوئی ہے، بریسٹ کینسر کا سبب بننے والا ہارمون میسی کینسر سینٹر کے محقق چارلس کلیوینجر اور ان کی لیب نے دریافت کیا ہے۔بریسٹ کینسر کا سبب بننے والے ہارمون کی دریافت سے کئی دیگر اقسام کے کینسر کا علاج بھی ممکن نظر آنے لگا ہے۔ورجینیا کامن ویلتھ یونی ورسٹی میں ہونے والی اس حالیہ تحقیق میں اس بات کے مضبوط شواہد ملے ہیں کہ چھاتی میں کینسر کی افزائش کا سبب بننے والا ایک ہارمون پروکلیٹین دراصل بریسٹ گروتھ کا سبب بنتا ہے، اور یہ حمل کے دوران ماں کے دودھ میں اضافے کی وجہ بھی ہوتا ہے۔محققین نے اس ہارمون کو بریسٹ کینسر کا اہم سبب قرار دیا ہے، انھوں نے خوش خبری سنائی کہ یہ ہارمون ٹارگیٹڈ دوا کی تیاری میں کافی مفید ثابت ہوگا، اور اس سے کئی قسم کے کینسر کا علاج کیا جا سکے گا۔محققین کے مطابق بریسٹ کینسر کا براہ راست سبب بننے والے اس ہارمون کے خلیات کی سطح پر پروٹین موجود ہوتا ہے، جسے رسیپٹرز کہتے ہیں۔ یہ ریسپٹرز بائیولوجیکل پیغامات وصول کرنے اور بھیجنے کے ساتھ خلیے کے افعال کو بھی ریگولیٹ کرتے ہیں۔