کورونا

کوروناوبا کے باعث ملک بھر میں مزید 5 ہزار 857 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 778,238 ہوگئی ہے۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 57 ہزار 591 کورونا ٹیسٹ کئے گئے، جس کے بعد مجموعی کووڈ 19 ٹیسٹس کی تعداد 11,377,42 ہوگئی ہے۔ملک بھر میں مزید 5 ہزار 857 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 778,238 ہوگئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک سندھ میں 2 لاکھ75 ہزار 081 ، پنجاب میں 2 لاکھ 79 ہزار 437، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 9 ہزار 704، اسلام آباد میں 71 ہزار 533، بلوچستان میں 21 ہزار 242 ، آزاد کشمیر میں 16 ہزار 026 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار 215 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک بھر میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد84 ہزار 935 ہے۔ جب کہ 4 ہزار سے زائد مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا سے مزید 98 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں جس کے بعد اب اس وبا سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد مجموعی طور پر 16 ہزار 698 ہوگئی ہے۔این سی او سی کے مطابق کورونا سے ایک دن میں 3 ہزار 986مریض صحت یاب ہوئے جس کے بعد صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 676,605ہوگئی ہے۔

CORONA VIRUS

ملک میں کورونا کی تباہ کاریاں جاری ہیں اور گزشتہ 24 گھنٹوں میں مزید 148 افراد وائرس سے انتقال کرگئے جب کہ 5499 کیسز بھی رپورٹ ہوئے ہیں۔ سرکاری پورٹل کے مطابق مک میں کورونا وائرس مثبت آنے کی شرح 11.6 فیصد رہی گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا کے 47301 ٹیسٹ کیے گئے جس میں سے 5499 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جبکہ وائرس سے 148 افراد انتقال کر گئے۔سرکاری پورٹل کے مطابق مک میں کورونا وائرس مثبت آنے کی شرح 11.6 فیصد رہی سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 16600 ہو گئی ہے اور مجموعی کیسز 7 لاکھ 72381 تک جاپہنچے ہیں جب کہ فعال کیسز کی تعداد 83162 ہے۔اس کے علاوہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں 5488 مریض کورونا سے صحتیاب بھی ہوئے جس کے بعد مجموعی طور پر صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 6 لاکھ 72619 ہو گئی ہے۔سرکاری پورٹل کے مطابق سندھ میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 274196 ہوگئی ہے جب کہ 4559 افراد اب تک انتقال کرچکے ہیں۔پنجاب میں کورونا کے کل مریضوں کی تعداد 276535 ہے اور 7664 افراد وائرس میں مبتلا ہوکر جان سے جاچکے ہیں جب کہ بلوچستان میں مریضوں کی کل تعداد 21127 اور ہلاکتیں 225 ہو چکی ہیں۔خیبرپختونخوا میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 108462 اور 2953 ہلاکتیں ہو چکی ہیں جبکہ آزاد کشمیر میں 15873 افراد وائرس میں مبتلا ہوچکے ہیں اور 446 افراد انتقال کرگئے۔اس کے علاوہ گلگت بلتستان میں اب تک کورونا کے مریضوں کی تعداد 5204 اور 104 افراد انتقال کرچکے ہیں۔پورٹل کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 70984 ہے اور اب تک 649 مریض انتقال کر چکے ہیں۔

CORONA

کوروناوبا کے باعث آج 137 افراد جاں بحق ہوگئے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 5 ہزار 445 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 766,882 ہوگئی ہے۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 68 ہزار 002 کورونا ٹیسٹ کئے گئے، جس کے بعد مجموعی کووڈ 19 ٹیسٹس کی تعداد 11,272,53 ہوگئی ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 5 ہزار 445 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 766,882 ہوگئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک سندھ میں 2 لاکھ73 ہزار 466 ، پنجاب میں 2 لاکھ 73 ہزار 566، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 7 ہزار 309، اسلام آباد میں 70 ہزار 609، بلوچستان میں 21 ہزار ، آزاد کشمیر میں 15 ہزار 741 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار 191 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک بھر میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد83 ہزار 298 ہے۔ جب کہ 4 ہزار سے زائد مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا سے مزید 137 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں جس کے بعد اب اس وبا سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد مجموعی طور پر 16 ہزار 453 ہوگئی ہے۔این سی او سی کے مطابق کورونا سے ایک دن میں 4 ہزار 286مریض صحت یاب ہوئے جس کے بعد صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 667,131ہوگئی ہے۔

Sindh Govt Corona New Notification

سندھ حکومت نے رمضان میں تاجر برادری کی مشکلات کم کرنے کی ٹھان لی ۔ محکمہ داخلہ نے بازاروں کی نئے اوقات کار کا حکم نامہ جاری کردیا ۔ تجارتی سرگرمیاں جمعہ اور اتوار کے بجائے اب ہفتہ اور اتوار مکمل بند رہیں گی سندھ میں اب بازار اور مارکیٹیں ہفتے اور اتوار کو بند رہیں گی۔جمعے کی چھٹی ختم کر دی گئی۔ محکمہ داخلہ سندھ نے کورونا ایس او پیز کے تحت مارکیٹوں اور بازاروں کے نئے اوقات کار کے حوالے سے حکم نامہ جاری کردیا حکم نامے کے مطابق ۔۔مارکیٹیں اور تجارتی مراکز سحری سے شام 6 بجے تک کھولنے کی اجازت ہوگی۔پابندوں کا نفاذ ایک ماہ تک رہے گا۔۔ سولہ مئی تک سیاسی، ثقافتی، سماجی اور کھیلوں کی ہرطرح کی سرگرمیوں پربھی پابندی ہوگی۔۔ ریسٹورنٹس میں ان ڈورڈائننگ کی فراہمی پر مکمل پابندی رہے گی۔۔آؤٹ ڈور کھانوں کی ٹائمنگ افطاری کےبعد سے رات12بجےتک ہوگی۔۔ ہفتے اور اتوار کو بین الصوبائی ٹرانسپورٹ‌ بھی بند رہے گی

CORONA

وبا کا پھیلاوٗ تھم نہ سکا، کورونا سے مزید 112 اموات ، وائرس سے ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد 16 ہزار سے تجاوز کرگئی،24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 7.62 فیصد رہی پاکستان میں کورونا کے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا کے 65279 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 4976 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جب کہ وائرس سے 112 افراد انتقال کر گئے۔سرکاری پورٹل کے مطابق ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 7.62 فیصد رہی۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 16094 ہو گئی ہے اور مجموعی کیسز 7 لاکھ 50158 تک جاپہنچے ہیں جب کہ فعال کیسز کی تعداد 79108 ہے۔
اس کے علاوہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں 4181 مریض کورونا سے صحتیاب بھی ہوئے جس کے بعد مجموعی طور پر صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 6 لاکھ 54956 ہو گئی ہے۔

Corona

کوروناوبا کے باعث آج 110 افراد جاں بحق جب کہ 5 ہزار سے زائد مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک بھر میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد78 ہزار 425 ہے۔ جب کہ 4 ہزار سے زائد مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 64 ہزار 481 کورونا ٹیسٹ کئے گئے، جس کے بعد مجموعی کووڈ 19 ٹیسٹس کی تعداد 11,007,25 ہوگئی ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 5 ہزار 364 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 745,182 ہوگئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک سندھ میں 2 لاکھ70 ہزار 963 ، پنجاب میں 2 لاکھ 61 ہزار 173، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 3 ہزار 419، اسلام آباد میں 68 ہزار 665، بلوچستان میں 20 ہزار 662، آزاد کشمیر میں 15 ہزار 137 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار 163 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک بھر میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد78 ہزار 425 ہے۔ جب کہ 4 ہزار سے زائد مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا سے مزید 110 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں جس کے بعد اب اس وبا سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد مجموعی طور پر 15 ہزار 982 ہوگئی ہے۔این سی او سی کے مطابق کورونا سے ایک دن میں 4 ہزار 123مریض صحت یاب ہوئے جس کے بعد صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 650,775ہوگئی ہے۔

Corona virus

پاکستان میں کورونا سے ایک ہی روز کے دوران 135 اموات ہوئیں جو رواں سال اب تک ہونے والی سب سے زیادہ اموات ہیں۔ ملک میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 15754 ہو گئی ہے اور مجموعی کیسز 7 لاکھ 34423 تک جاپہنچے ہیں جب کہ فعال کیسز کی تعداد 76757 ہےگزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا کے 48092 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 4681 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جبکہ وائرس سے 135 افراد انتقال کر گئے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 15754 ہو گئی ہے اور مجموعی کیسز 7 لاکھ 34423 تک جاپہنچے ہیں جب کہ فعال کیسز کی تعداد 76757 ہے۔سرکاری پورٹل کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 9.7 رہی۔اس کے علاوہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں 3645 مریض کورونا سے صحتیاب بھی ہوئے جس کے بعد مجموعی طور پر صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 6 لاکھ 41912 ہو گئی ہے۔سرکاری پورٹل کے مطابق سندھ میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 269840 ہوگئی ہے جب کہ 4530 افراد اب تک انتقال کرچکے ہیں۔پنجاب میں کورونا کے کل مریضوں کی تعداد 255571 ہے اور 7141 افراد وائرس میں مبتلا ہوکر جان سے جاچکے ہیں جب کہ بلوچستان میں مریضوں کی کل تعداد 20499 اور ہلاکتیں 219 ہو چکی ہیں۔خیبرپختونخوا میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 101045 اور 2732 ہلاکتیں ہو چکی ہیں جبکہ آزاد کشمیر میں 14837 افراد وائرس میں مبتلا ہوچکے ہیں اور 410 افراد انتقال کرگئے۔اس کے علاوہ گلگت بلتستان میں اب تک کورونا کے مریضوں کی تعداد 5140 اور 103 افراد انتقال کرچکے ہیں۔پورٹل کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 67491 ہے اور اب تک 619 مریض انتقال کر چکے ہیں۔

SMART MASK

ضرورت ایجاد کی ماں ہے ،امریکا نے ٹیکنالوجی سے لیس سپر ماسک نامی اسمارٹ ماسک متعارف کرادیا۔دلچسپ ماسک کے بارے میں جانتے ہیں اس رپورٹ میں ٹیکنالوجی سے لیس اس سپر ماسک کی خاص بات یہ ہے کہ اس میں تین پنکھے اور ایسے ڈیجیٹل فلٹرز نصب ہیں جو ہوا کو سانس کے لیے صاف بنانے میں مددگار بناتے ہیں۔سپر ماسک میں جہاں پنکھے نصب ہیں، وہیں اس میں بلیوٹوتھ، ہیڈفون اور مائیکرو فون کی سہولت بھی ہے اور فیس ماسک کے مذکورہ تمام فیچرز بیٹری کی مدد سے کام کرتے ہیں جو 7 گھنٹے تک کام کرتی ہے۔سپر ماسک کی رقم 300 امریکی ڈالر یعنی پاکستانی 50 ہزار روپے کے قریب تک رکھی گئی ہے۔امریکا نے ٹیکنالوجی سے لیس سپر ماسک نامی اسمارٹ ماسک متعارف کرادیا ماسک میں بلیوٹوتھ، ہیڈفون،مائیکرو فون کی سہولت بھی موجود ہے

Covid 19 precaution or kills

کیا دھوپ کی شدت میں اضافہ، کووِڈ 19 سے اموات میں کمی کی وجہ ہے؟برطانوی سائنسدانوں کا انکشاف ہے کہ جن علاقوں میں زیادہ دیر تک تیز دھوپ رہتی ہے، وہاں کورونا وائرس کی وجہ سے اموات کی شرح بھی کم دیکھی گئی ہے۔ایڈنبرا یونیورسٹی، برطانیہ کے ماہرین نے جنوری سے اپریل 2020 تک امریکا کی 2474 کاؤنٹیز میں کووِڈ 19 سے اموات اور ان علاقوں میں اسی دوران الٹراوائیلٹ اے (یو وی اے) کی مقدار کا آپس میں موازنہ کیا۔واضح رہے کہ ’’یو وی اے‘‘ بالائے بنفشی شعاعوں کی وہ قسم ہے جو سورج کی روشنی (دھوپ) میں سب سے عام پائی جاتی ہے۔ یعنی دھوپ کی شدت جتنی زیادہ ہوگی، اس میں یو وی اے کی مقدار بھی اتنی ہی زیادہ ہوگی۔ اسی طرح زیادہ دیر تک دھوپ پڑنے کا نتیجہ بھی زیادہ یو وی اے کی شکل میں ظاہر ہوتا ہے۔بادلوں کی وجہ سے دھوپ کے ساتھ ساتھ ’’یو وی اے‘‘ کی زمینی سطح تک پہنچنے والی مقدار بھی کم ہوتی ہے۔اس مطالعے میں دیکھا گیا کہ زیادہ دھوپ/ یو وی اے والی کاؤنٹیز میں کووِڈ 19 سے اموات کی شرح، کم دھوپ/ یو وی اے والے علاقوں کے مقابلے میں نمایاں طور پر کم تھی۔برطانیہ اور اٹلی میں کی گئی ایسی ہی دو اور تحقیقات میں بھی یہی نتائج سامنے آئے۔سائنسدانوں نے یہ بھی دریافت کیا ہے کہ دھوپ کے باعث کورونا سے اموات میں کمی کا ’’وٹامن ڈی‘‘ سے کوئی تعلق نہیں، جو دھوپ کے باعث انسانی جسم میں بنتا ہے۔اعداد و شمار کی بنیاد پر ماہرین نے حساب لگایا ہے کہ دھوپ کی شدت میں 100 کلوجول فی مربع میٹر اضافے پر کووِڈ سے اموات میں بھی تقریباً ایک تہائی کمی واقع ہوتی ہے۔اس سب کے باوجود، ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ یہ تحقیق مشاہدات پر مبنی ہے جس سے دھوپ/ یو وی اے میں اضافے اور کورونا وائرس سے اموات میں کمی میں نمایاں تعلق سامنے آیا ہے۔ لیکن فی الحال یہ کہنا قبل از وقت ہے کہ دھوپ ہی کورونا وائرس سے اموات میں کمی کی وجہ بنتی ہے۔علاوہ ازیں، اگر دھوپ میں شامل ’’یو وی اے‘‘ شعاعوں سے کورونا کی ہلاکت خیزی میں کمی واقع ہونا ثابت بھی ہوجائے، تب بھی یہ معلوم کرنا باقی رہے گا کہ آخر وہ نظام کیا ہے جو اس سب کی وجہ بنتا ہے۔کیا دھوپ کی شدت میں اضافہ، کووِڈ 19 سے اموات میں کمی کی وجہ ہے؟

CORONA

ملک میں کورونا وبا کی شدت برقرار ہے اور اس مرض کے فعال کیسز کی مجموعی تعداد 75 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا مثبت کیسز کی شرح 10.29 فیصد رہی ہے، ملک میں کورونا سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 7 لاکھ 25 ہزار 602 ہو گئی ہےنیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا کے 44 ہزار 514 ٹیسٹ کیے گئے، اس طرح اب تک ملک میں کوویڈ 19 کی تشخیص کے لیے کئے گئے ٹیسٹس کی مجموعی تعداد ایک کروڑ 7 لاکھ 79 ہزار سے زائد ہوگئی ہے۔24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 4584 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جب کہ ملک بھر میں 3135 مریض کورونا سے صحتیاب ہوئے۔سرکاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا مثبت کیسز کی شرح 10.29 فیصد رہی ہے، ملک میں کورونا سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 7 لاکھ 25 ہزار 602 ہو گئی ہے۔ جن میں سے 6 لاکھ 34 ہزار 835 افراد کورونا سے صحتیاب ہوچکے ہیں۔اب تک سندھ میں 2 لاکھ 69 ہزار 126، پنجاب 2 لاکھ 50 ہزار 459، اسلام آباد میں 66 ہزار 380، خیبر پختونخوا میں 99 ہزار 595، سندھ 2 لاکھ 69 ہزار 126، بلوچستان 20 ہزار 321، آزاد کشمیر 14 ہزار 594 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار 127 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوچکی ہے۔این سی او سی کے مطابق ملک میں مزید 58 افراد اس وبا کا شکار ہوکر لقمہ اجل بن گئے ، اس طرح ملک میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 15501 ہو گئی ہے۔ کورونا کے سبب سب سے زیادہ اموات پنجاب میں ہوئی ہیں جہاں 6 ہزار 988 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں، سندھ میں 4 ہزار 530، خیبر پختونخوا 2 ہزار 651، اسلام آباد 611، گلگت بلتستان 103، بلوچستان میں 215 اور آزاد کشمیر میں 403 افراد اس وبا کے ہاتھوں لقمہ اجل بن گئے ہیں۔ملک میں کورونا کے فعال کیسز کی تعداد میں بتدریج اضافہ ہوتا جارہا ہے اور اب یہ تعداد ایک مرتبہ پھر 75 ہزار 266 ہوگئی ہے۔ جن میں سے 4 ہزار 201 افراد کی حالت تشویشناک ہے۔ اس وقت ملک بھر میں کورونا کے 512 مریض وینٹی لیٹرز پر ہیں۔ اس وقت گوجرانوالہ میں 85 ، ملتان میں 81 ، لاہور 79 اور اسلام اباد میں 55 فی صد وینٹی لیٹرز پر کورونا مریض زیر علاج ہیں۔ اس کے علاوہ گوجرانوالہ کے 85 فی صد، پشاور کے 73، گجرات کے 71 اور سوات 66 فی صد آکسیجن بیڈز پر کورونا مریض ہیں۔