XTEMOS ELEMENT

POST ELEMENT STYLE MASONRY

World Corona

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی جبکہ 39 لاکھ 80 ہزار 224 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

امریکہ میں کورونا سے مرنے والوں کی کل تعداد 6 لاکھ 21 ہزار 161 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 3 کروڑ 45 لاکھ 80 ہزار سے زائد متاثر ہیں۔

بھارت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 3 کروڑ 5 لاکھ ایک ہزار سے زائد ہے اور 4 لاکھ ایک ہزار 68 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

برازیل میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 86 لاکھ 87 ہزار سے زائد ہو گئی ہے اور 5 لاکھ 22 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

کورونا وائرس: دنیا میں کیسز کی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی

 

Health

سائنس سے اب ثابت ہوا ہے کہ ذہنی تناؤ سے بالوں کے سفید ہونے کا عمل بہت تیز ہوجاتا ہے لیکن اچھی خبر یہ ہے کہ تناؤ کم کرکے بالوں کو تیزی سے بوڑھا ہونے سے روکا جاسکتا ہے۔

کولمبیا یونیورسٹی کے ویگی لوس کالج آف فزیشن اینڈ سرجن سے وابستہ ماہرین نے پہلی مرتبہ بہت بڑی تعداد کے ثبوت پیش کئے ہیں جو نفسیاتی تناؤ اور بالوں کے سفیدی کا تعلق بیان کرتے ہیں۔ لیکن سائنسداں یہ جان کر حیران رہ گئے کہ جیسے ہی تناؤ کم ہوتا ہے تو بالوں کی سیاہی لوٹ آتی ہے۔

یہ تحقیق 22 جون کو ای لائف نامی ریسرچ جرنل میں شائع ہوئی ہے جس سے یہ تصور زائل ہوتا ہے کہ تناؤ سے سفید ہونے والے بال دوبارہ سیاہ نہیں ہوسکتے۔ یہ تحقیق کولمبیا یونیورسٹی کے نفسیات داں، مارٹِن پیکارڈ اور ان کے ساتھیوں نے کی ہے۔ ’پرانے سفید یا بھورے بالوں کو دوبارہ ’جوان‘ رنگت (پگمنٹ) کے درجے تک لوٹانے کے نئے ثبوت ملے ہیں جس سے بالوں کی سفیدی دور کرنے اور دماغی تناؤ کو سمجھنے میں مدد مل سکے گی۔‘

اس تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ انسانی عمر رسیدگی کوئی ناقابلِ تلافی یا جامد حیاتیاتی عمل نہیں بلکہ اسے روکا یا وقتی طور پر پلٹایا جاسکتا ہے۔ جب بالوں کی جڑ(فولیکل) کھال کے نیچے ہوتی ہے تو نفسیاتی دباؤ کے ہارمون اس پر اثرڈالتے ہیں اور یہ عمل مستقل ہوجاتا ہے اور سفید بال ہی نمودار ہوتے رہتے ہیں۔

اس دوران انکشاف ہوا کہ بعض افراد کے سفید بال دوبارہ اصل رنگت کی جانب لوٹ آئے اور جب تناؤ کی ڈائری سے اس کا موازنہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ اس عرصے میں وہ ذہنی تناؤ کے کم تردرجے کے شکار تھے۔ اس کے علاوہ پانچ رضاکار ایسے تھے جو چھٹیوں پر تھے اور آرام کررہے تھے۔ اس دوران تناؤ کم ہونے سے ان کے سر کے جو بال اگے وہ سفید کی بجائے اصل رنگت کے برآمد ہوئے۔

Sports

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سینٹرل کنٹریکٹ برائے2021-22 کا اعلان کردیا نئے کنٹریکٹ میں کئی کھلاڑیوں کو نکال دیا گیا اور کچھ کی تنزلی بھی ہوئی ہے۔

بابراعظم، حسن علی، محمد رضوان اور شاہین شاہ آفریدی کو کٹیگری اے میں شامل کیا گیا ہے۔ اظہر علی، فہیم اشرف، فخر زمان، فواد عالم، شاداب خان اور یاسر شاہ کیٹیگری بی میں شامل ہیں۔عابد علی، امام الحق، حارث رؤف، محمد حسنین، محمد نواز، نعمان علی اور سرفراز احمد کو کیٹیگری سی میں شامل کیا گیا ہے۔عمران بٹ ، شاہنواز دھانی اور عثمان قادر ایمرجنگ کیٹیگری میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ اسد شفیق، شان مسعود، محمد عباس سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔حارث سہیل، افتخار احمد، عماد وسیم، عثمان شنواری کو بھی سنٹرل کنٹریکٹ نہ ملا۔  نسیم شاہ، حیدر علی بھی سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔سابق کپتان اظہر علی کی اے سے بی کٹیگیری میں تنزلی۔ سابق کپتان سرفراز احمد بی سے سی کٹیگیری میں آگئے۔  فواد عالم کی سی سے بی کٹیگیری میں ترقی ہوئی ہے۔قومی کرکٹر کے ماہانہ معاوضے میں پچیس25 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے۔

Punjab Weather

پنجاب کے مختلف علاقوں میں آندھی اور موسلادھار بارش , لاہور میں ایک سو دو کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار کی آندھی اسلام آباد اور راولپنڈی کے مختلف علاقوں میں بارش کے ساتھ ژالہ باری بھی ہوئی جس سے موسم خوشگوار ہوگیا

لاہور میں ایک سو دو کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار کی آندھی آئی۔ گوجرانوالہ اور گرد و نواح میں آندھی کے باعث مختلف علاقوں کی بجلی معطل ہوگئی۔

جہلم اور ظفروال میں بھی گرج چمک کے ساتھ موسلادھار بارش ہوئی جبکہ اسلام آباد اور راولپنڈی کے مختلف علاقوں میں بارش کے ساتھ ژالہ باری بھی ہوئی جس سے موسم خوشگوار ہوگیا۔

پنجاب کے مختلف علاقوں میں آندھی اور بارش

Nepra Final

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بعد غریب عوام پر بجلی کا بم بھی گرادیا گیا،، نیپرا نے گھریلو اور کمرشل صارفین کے لیے بجلی کے نرخوں میں بالترتیب آٹھ اورگیارہ پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دیدی، اضافے کی منظوری کا اطلاق اکتوبر دو ہزار اکیس سے ہوگا

پیٹرول کے بعد غریب عوام پر بجلی کا بم گرادیا گیا

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی نے گھریلو اور کمرشل صارفین کے لیے بجلی کے نرخوں میں اضافے کی منظوری دے دی

بریدنگ سپیس:::

نیپرا نے گھریلو صارفین کے لیے آٹھ پیسے اور کمرشل صارفین کے لیے گیارہ پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دی ہے، اس ٹیرف کی ایڈجسٹمنٹ ایک سال تک لاگو رہے گی، اضافے کی منظوری کا اطلاق اکتوبر دو ہزار اکیس سے ہوگا،، اس ضمن میں نیپرا کی جانب سے کہا گیا کہ ڈسکوز نے نیپرا کو سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی درخواستیں دی تھیں

بریدنگ سپیس:::

ان درخواستوں پر مالی سال دو ہزار بیس، اکیس کی پہلی اور دوسری سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی منظوری دے دی گئی ہے،، نیرا کی جانب سے واضح کیا گیا کہ ٹیرف کا اطلاق ڈسکوز کے تمام صارفین ماسوائے لائف لائن اور تین سو یونٹ تک استعمال کرنے والوں پر لاگو ہوگا۔۔۔

Saeed Ghani

سندھ کے وزیرتعلیم سعید غنی نے نیب کو چیلنج کردیا ،،، کہتے ہیں انتظار میں ہوں مجھے بلوائیں ،،، اگر نیب نےاپنا وقار بحال کرنا ہے تو حلیم عادل شیخ کو گرفتار کرے۔۔ تفصیلات اس رپورٹ میں

سندھ کے وزیر تعلیم سعید غنی کے نیب پر وار۔۔۔

سندھ اسمبلی میں پریس کانفرنس کے دوران نیب پر جانبداری کا الزام لگاتے ہوئے کہا اگر توہین نیب کا مرتکب ہوا ہوں تو چیلنج ہے مجھے طلب کیا جائے،،،

سعید غنی کا کہنا تھا چیئرمین نیب حکومت کے ہاتھوں بلیک میل ہورہے ہیں ۔۔۔ انہیں اگر اپنا وقار بحال کرنا ہے تو حلیم عادل شیخ کو گرفتار اور ان کا نام ای سی ایل میں ڈالیں۔۔

سعید غنی کا مزید کہنا تھا نیب کی غیرقانونی مداخلت کی وجہ سے حکومتیں کام نہیں کرپارہی ہیں، نیب ملکی معشیت میں بھی رکاوٹ ہے۔۔

XTEMOS ELEMENT

BLOG DEFAULT

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی جبکہ 39 لاکھ 80 ہزار 224 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

امریکہ میں کورونا سے مرنے والوں کی کل تعداد 6 لاکھ 21 ہزار 161 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 3 کروڑ 45 لاکھ 80 ہزار سے زائد متاثر ہیں۔

بھارت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 3 کروڑ 5 لاکھ ایک ہزار سے زائد ہے اور 4 لاکھ ایک ہزار 68 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

برازیل میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 86 لاکھ 87 ہزار سے زائد ہو گئی ہے اور 5 لاکھ 22 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

کورونا وائرس: دنیا میں کیسز کی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی

 

سائنس سے اب ثابت ہوا ہے کہ ذہنی تناؤ سے بالوں کے سفید ہونے کا عمل بہت تیز ہوجاتا ہے لیکن اچھی خبر یہ ہے کہ تناؤ کم کرکے بالوں کو تیزی سے بوڑھا ہونے سے روکا جاسکتا ہے۔

کولمبیا یونیورسٹی کے ویگی لوس کالج آف فزیشن اینڈ سرجن سے وابستہ ماہرین نے پہلی مرتبہ بہت بڑی تعداد کے ثبوت پیش کئے ہیں جو نفسیاتی تناؤ اور بالوں کے سفیدی کا تعلق بیان کرتے ہیں۔ لیکن سائنسداں یہ جان کر حیران رہ گئے کہ جیسے ہی تناؤ کم ہوتا ہے تو بالوں کی سیاہی لوٹ آتی ہے۔

یہ تحقیق 22 جون کو ای لائف نامی ریسرچ جرنل میں شائع ہوئی ہے جس سے یہ تصور زائل ہوتا ہے کہ تناؤ سے سفید ہونے والے بال دوبارہ سیاہ نہیں ہوسکتے۔ یہ تحقیق کولمبیا یونیورسٹی کے نفسیات داں، مارٹِن پیکارڈ اور ان کے ساتھیوں نے کی ہے۔ ’پرانے سفید یا بھورے بالوں کو دوبارہ ’جوان‘ رنگت (پگمنٹ) کے درجے تک لوٹانے کے نئے ثبوت ملے ہیں جس سے بالوں کی سفیدی دور کرنے اور دماغی تناؤ کو سمجھنے میں مدد مل سکے گی۔‘

اس تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ انسانی عمر رسیدگی کوئی ناقابلِ تلافی یا جامد حیاتیاتی عمل نہیں بلکہ اسے روکا یا وقتی طور پر پلٹایا جاسکتا ہے۔ جب بالوں کی جڑ(فولیکل) کھال کے نیچے ہوتی ہے تو نفسیاتی دباؤ کے ہارمون اس پر اثرڈالتے ہیں اور یہ عمل مستقل ہوجاتا ہے اور سفید بال ہی نمودار ہوتے رہتے ہیں۔

اس دوران انکشاف ہوا کہ بعض افراد کے سفید بال دوبارہ اصل رنگت کی جانب لوٹ آئے اور جب تناؤ کی ڈائری سے اس کا موازنہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ اس عرصے میں وہ ذہنی تناؤ کے کم تردرجے کے شکار تھے۔ اس کے علاوہ پانچ رضاکار ایسے تھے جو چھٹیوں پر تھے اور آرام کررہے تھے۔ اس دوران تناؤ کم ہونے سے ان کے سر کے جو بال اگے وہ سفید کی بجائے اصل رنگت کے برآمد ہوئے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سینٹرل کنٹریکٹ برائے2021-22 کا اعلان کردیا نئے کنٹریکٹ میں کئی کھلاڑیوں کو نکال دیا گیا اور کچھ کی تنزلی بھی ہوئی ہے۔

بابراعظم، حسن علی، محمد رضوان اور شاہین شاہ آفریدی کو کٹیگری اے میں شامل کیا گیا ہے۔ اظہر علی، فہیم اشرف، فخر زمان، فواد عالم، شاداب خان اور یاسر شاہ کیٹیگری بی میں شامل ہیں۔عابد علی، امام الحق، حارث رؤف، محمد حسنین، محمد نواز، نعمان علی اور سرفراز احمد کو کیٹیگری سی میں شامل کیا گیا ہے۔عمران بٹ ، شاہنواز دھانی اور عثمان قادر ایمرجنگ کیٹیگری میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ اسد شفیق، شان مسعود، محمد عباس سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔حارث سہیل، افتخار احمد، عماد وسیم، عثمان شنواری کو بھی سنٹرل کنٹریکٹ نہ ملا۔  نسیم شاہ، حیدر علی بھی سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔سابق کپتان اظہر علی کی اے سے بی کٹیگیری میں تنزلی۔ سابق کپتان سرفراز احمد بی سے سی کٹیگیری میں آگئے۔  فواد عالم کی سی سے بی کٹیگیری میں ترقی ہوئی ہے۔قومی کرکٹر کے ماہانہ معاوضے میں پچیس25 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے۔

XTEMOS ELEMENT

BLOG WITH SMALL IMAGES

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی جبکہ 39 لاکھ 80 ہزار 224 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

امریکہ میں کورونا سے مرنے والوں کی کل تعداد 6 لاکھ 21 ہزار 161 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 3 کروڑ 45 لاکھ 80 ہزار سے زائد متاثر ہیں۔

بھارت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 3 کروڑ 5 لاکھ ایک ہزار سے زائد ہے اور 4 لاکھ ایک ہزار 68 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

برازیل میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 86 لاکھ 87 ہزار سے زائد ہو گئی ہے اور 5 لاکھ 22 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

کورونا وائرس: دنیا میں کیسز کی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی

 

سائنس سے اب ثابت ہوا ہے کہ ذہنی تناؤ سے بالوں کے سفید ہونے کا عمل بہت تیز ہوجاتا ہے لیکن اچھی خبر یہ ہے کہ تناؤ کم کرکے بالوں کو تیزی سے بوڑھا ہونے سے روکا جاسکتا ہے۔

کولمبیا یونیورسٹی کے ویگی لوس کالج آف فزیشن اینڈ سرجن سے وابستہ ماہرین نے پہلی مرتبہ بہت بڑی تعداد کے ثبوت پیش کئے ہیں جو نفسیاتی تناؤ اور بالوں کے سفیدی کا تعلق بیان کرتے ہیں۔ لیکن سائنسداں یہ جان کر حیران رہ گئے کہ جیسے ہی تناؤ کم ہوتا ہے تو بالوں کی سیاہی لوٹ آتی ہے۔

یہ تحقیق 22 جون کو ای لائف نامی ریسرچ جرنل میں شائع ہوئی ہے جس سے یہ تصور زائل ہوتا ہے کہ تناؤ سے سفید ہونے والے بال دوبارہ سیاہ نہیں ہوسکتے۔ یہ تحقیق کولمبیا یونیورسٹی کے نفسیات داں، مارٹِن پیکارڈ اور ان کے ساتھیوں نے کی ہے۔ ’پرانے سفید یا بھورے بالوں کو دوبارہ ’جوان‘ رنگت (پگمنٹ) کے درجے تک لوٹانے کے نئے ثبوت ملے ہیں جس سے بالوں کی سفیدی دور کرنے اور دماغی تناؤ کو سمجھنے میں مدد مل سکے گی۔‘

اس تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ انسانی عمر رسیدگی کوئی ناقابلِ تلافی یا جامد حیاتیاتی عمل نہیں بلکہ اسے روکا یا وقتی طور پر پلٹایا جاسکتا ہے۔ جب بالوں کی جڑ(فولیکل) کھال کے نیچے ہوتی ہے تو نفسیاتی دباؤ کے ہارمون اس پر اثرڈالتے ہیں اور یہ عمل مستقل ہوجاتا ہے اور سفید بال ہی نمودار ہوتے رہتے ہیں۔

اس دوران انکشاف ہوا کہ بعض افراد کے سفید بال دوبارہ اصل رنگت کی جانب لوٹ آئے اور جب تناؤ کی ڈائری سے اس کا موازنہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ اس عرصے میں وہ ذہنی تناؤ کے کم تردرجے کے شکار تھے۔ اس کے علاوہ پانچ رضاکار ایسے تھے جو چھٹیوں پر تھے اور آرام کررہے تھے۔ اس دوران تناؤ کم ہونے سے ان کے سر کے جو بال اگے وہ سفید کی بجائے اصل رنگت کے برآمد ہوئے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سینٹرل کنٹریکٹ برائے2021-22 کا اعلان کردیا نئے کنٹریکٹ میں کئی کھلاڑیوں کو نکال دیا گیا اور کچھ کی تنزلی بھی ہوئی ہے۔

بابراعظم، حسن علی، محمد رضوان اور شاہین شاہ آفریدی کو کٹیگری اے میں شامل کیا گیا ہے۔ اظہر علی، فہیم اشرف، فخر زمان، فواد عالم، شاداب خان اور یاسر شاہ کیٹیگری بی میں شامل ہیں۔عابد علی، امام الحق، حارث رؤف، محمد حسنین، محمد نواز، نعمان علی اور سرفراز احمد کو کیٹیگری سی میں شامل کیا گیا ہے۔عمران بٹ ، شاہنواز دھانی اور عثمان قادر ایمرجنگ کیٹیگری میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ اسد شفیق، شان مسعود، محمد عباس سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔حارث سہیل، افتخار احمد، عماد وسیم، عثمان شنواری کو بھی سنٹرل کنٹریکٹ نہ ملا۔  نسیم شاہ، حیدر علی بھی سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔سابق کپتان اظہر علی کی اے سے بی کٹیگیری میں تنزلی۔ سابق کپتان سرفراز احمد بی سے سی کٹیگیری میں آگئے۔  فواد عالم کی سی سے بی کٹیگیری میں ترقی ہوئی ہے۔قومی کرکٹر کے ماہانہ معاوضے میں پچیس25 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے۔

XTEMOS ELEMENT

BLOG CHESS

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی جبکہ 39 لاکھ 80 ہزار 224 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

امریکہ میں کورونا سے مرنے والوں کی کل تعداد 6 لاکھ 21 ہزار 161 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 3 کروڑ 45 لاکھ 80 ہزار سے زائد متاثر ہیں۔

بھارت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 3 کروڑ 5 لاکھ ایک ہزار سے زائد ہے اور 4 لاکھ ایک ہزار 68 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

برازیل میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 86 لاکھ 87 ہزار سے زائد ہو گئی ہے اور 5 لاکھ 22 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

کورونا وائرس: دنیا میں کیسز کی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی

 

سائنس سے اب ثابت ہوا ہے کہ ذہنی تناؤ سے بالوں کے سفید ہونے کا عمل بہت تیز ہوجاتا ہے لیکن اچھی خبر یہ ہے کہ تناؤ کم کرکے بالوں کو تیزی سے بوڑھا ہونے سے روکا جاسکتا ہے۔

کولمبیا یونیورسٹی کے ویگی لوس کالج آف فزیشن اینڈ سرجن سے وابستہ ماہرین نے پہلی مرتبہ بہت بڑی تعداد کے ثبوت پیش کئے ہیں جو نفسیاتی تناؤ اور بالوں کے سفیدی کا تعلق بیان کرتے ہیں۔ لیکن سائنسداں یہ جان کر حیران رہ گئے کہ جیسے ہی تناؤ کم ہوتا ہے تو بالوں کی سیاہی لوٹ آتی ہے۔

یہ تحقیق 22 جون کو ای لائف نامی ریسرچ جرنل میں شائع ہوئی ہے جس سے یہ تصور زائل ہوتا ہے کہ تناؤ سے سفید ہونے والے بال دوبارہ سیاہ نہیں ہوسکتے۔ یہ تحقیق کولمبیا یونیورسٹی کے نفسیات داں، مارٹِن پیکارڈ اور ان کے ساتھیوں نے کی ہے۔ ’پرانے سفید یا بھورے بالوں کو دوبارہ ’جوان‘ رنگت (پگمنٹ) کے درجے تک لوٹانے کے نئے ثبوت ملے ہیں جس سے بالوں کی سفیدی دور کرنے اور دماغی تناؤ کو سمجھنے میں مدد مل سکے گی۔‘

اس تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ انسانی عمر رسیدگی کوئی ناقابلِ تلافی یا جامد حیاتیاتی عمل نہیں بلکہ اسے روکا یا وقتی طور پر پلٹایا جاسکتا ہے۔ جب بالوں کی جڑ(فولیکل) کھال کے نیچے ہوتی ہے تو نفسیاتی دباؤ کے ہارمون اس پر اثرڈالتے ہیں اور یہ عمل مستقل ہوجاتا ہے اور سفید بال ہی نمودار ہوتے رہتے ہیں۔

اس دوران انکشاف ہوا کہ بعض افراد کے سفید بال دوبارہ اصل رنگت کی جانب لوٹ آئے اور جب تناؤ کی ڈائری سے اس کا موازنہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ اس عرصے میں وہ ذہنی تناؤ کے کم تردرجے کے شکار تھے۔ اس کے علاوہ پانچ رضاکار ایسے تھے جو چھٹیوں پر تھے اور آرام کررہے تھے۔ اس دوران تناؤ کم ہونے سے ان کے سر کے جو بال اگے وہ سفید کی بجائے اصل رنگت کے برآمد ہوئے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سینٹرل کنٹریکٹ برائے2021-22 کا اعلان کردیا نئے کنٹریکٹ میں کئی کھلاڑیوں کو نکال دیا گیا اور کچھ کی تنزلی بھی ہوئی ہے۔

بابراعظم، حسن علی، محمد رضوان اور شاہین شاہ آفریدی کو کٹیگری اے میں شامل کیا گیا ہے۔ اظہر علی، فہیم اشرف، فخر زمان، فواد عالم، شاداب خان اور یاسر شاہ کیٹیگری بی میں شامل ہیں۔عابد علی، امام الحق، حارث رؤف، محمد حسنین، محمد نواز، نعمان علی اور سرفراز احمد کو کیٹیگری سی میں شامل کیا گیا ہے۔عمران بٹ ، شاہنواز دھانی اور عثمان قادر ایمرجنگ کیٹیگری میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ اسد شفیق، شان مسعود، محمد عباس سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔حارث سہیل، افتخار احمد، عماد وسیم، عثمان شنواری کو بھی سنٹرل کنٹریکٹ نہ ملا۔  نسیم شاہ، حیدر علی بھی سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔سابق کپتان اظہر علی کی اے سے بی کٹیگیری میں تنزلی۔ سابق کپتان سرفراز احمد بی سے سی کٹیگیری میں آگئے۔  فواد عالم کی سی سے بی کٹیگیری میں ترقی ہوئی ہے۔قومی کرکٹر کے ماہانہ معاوضے میں پچیس25 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے۔

پنجاب کے مختلف علاقوں میں آندھی اور موسلادھار بارش , لاہور میں ایک سو دو کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار کی آندھی اسلام آباد اور راولپنڈی کے مختلف علاقوں میں بارش کے ساتھ ژالہ باری بھی ہوئی جس سے موسم خوشگوار ہوگیا

لاہور میں ایک سو دو کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار کی آندھی آئی۔ گوجرانوالہ اور گرد و نواح میں آندھی کے باعث مختلف علاقوں کی بجلی معطل ہوگئی۔

جہلم اور ظفروال میں بھی گرج چمک کے ساتھ موسلادھار بارش ہوئی جبکہ اسلام آباد اور راولپنڈی کے مختلف علاقوں میں بارش کے ساتھ ژالہ باری بھی ہوئی جس سے موسم خوشگوار ہوگیا۔

پنجاب کے مختلف علاقوں میں آندھی اور بارش

XTEMOS ELEMENT

BLOG ALTERNATIVE

corona

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی جبکہ 39 لاکھ 80 ہزار 224 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

دنیا بھرمیں کورونا سے صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 16 کروڑ 82 لاکھ سے زائد اور فعال کیسز کی تعداد ایک کروڑ 15 لاکھ 97 ہزار سے زائد ہے۔

امریکہ میں کورونا سے مرنے والوں کی کل تعداد 6 لاکھ 21 ہزار 161 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 3 کروڑ 45 لاکھ 80 ہزار سے زائد متاثر ہیں۔

بھارت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 3 کروڑ 5 لاکھ ایک ہزار سے زائد ہے اور 4 لاکھ ایک ہزار 68 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

برازیل میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 86 لاکھ 87 ہزار سے زائد ہو گئی ہے اور 5 لاکھ 22 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

کورونا وائرس: دنیا میں کیسز کی تعداد 18 کروڑ 38 لاکھ سے بڑھ گئی

 

health

سائنس سے اب ثابت ہوا ہے کہ ذہنی تناؤ سے بالوں کے سفید ہونے کا عمل بہت تیز ہوجاتا ہے لیکن اچھی خبر یہ ہے کہ تناؤ کم کرکے بالوں کو تیزی سے بوڑھا ہونے سے روکا جاسکتا ہے۔

کولمبیا یونیورسٹی کے ویگی لوس کالج آف فزیشن اینڈ سرجن سے وابستہ ماہرین نے پہلی مرتبہ بہت بڑی تعداد کے ثبوت پیش کئے ہیں جو نفسیاتی تناؤ اور بالوں کے سفیدی کا تعلق بیان کرتے ہیں۔ لیکن سائنسداں یہ جان کر حیران رہ گئے کہ جیسے ہی تناؤ کم ہوتا ہے تو بالوں کی سیاہی لوٹ آتی ہے۔

یہ تحقیق 22 جون کو ای لائف نامی ریسرچ جرنل میں شائع ہوئی ہے جس سے یہ تصور زائل ہوتا ہے کہ تناؤ سے سفید ہونے والے بال دوبارہ سیاہ نہیں ہوسکتے۔ یہ تحقیق کولمبیا یونیورسٹی کے نفسیات داں، مارٹِن پیکارڈ اور ان کے ساتھیوں نے کی ہے۔ ’پرانے سفید یا بھورے بالوں کو دوبارہ ’جوان‘ رنگت (پگمنٹ) کے درجے تک لوٹانے کے نئے ثبوت ملے ہیں جس سے بالوں کی سفیدی دور کرنے اور دماغی تناؤ کو سمجھنے میں مدد مل سکے گی۔‘

اس تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ انسانی عمر رسیدگی کوئی ناقابلِ تلافی یا جامد حیاتیاتی عمل نہیں بلکہ اسے روکا یا وقتی طور پر پلٹایا جاسکتا ہے۔ جب بالوں کی جڑ(فولیکل) کھال کے نیچے ہوتی ہے تو نفسیاتی دباؤ کے ہارمون اس پر اثرڈالتے ہیں اور یہ عمل مستقل ہوجاتا ہے اور سفید بال ہی نمودار ہوتے رہتے ہیں۔

اس دوران انکشاف ہوا کہ بعض افراد کے سفید بال دوبارہ اصل رنگت کی جانب لوٹ آئے اور جب تناؤ کی ڈائری سے اس کا موازنہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ اس عرصے میں وہ ذہنی تناؤ کے کم تردرجے کے شکار تھے۔ اس کے علاوہ پانچ رضاکار ایسے تھے جو چھٹیوں پر تھے اور آرام کررہے تھے۔ اس دوران تناؤ کم ہونے سے ان کے سر کے جو بال اگے وہ سفید کی بجائے اصل رنگت کے برآمد ہوئے۔

Sport

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سینٹرل کنٹریکٹ برائے2021-22 کا اعلان کردیا نئے کنٹریکٹ میں کئی کھلاڑیوں کو نکال دیا گیا اور کچھ کی تنزلی بھی ہوئی ہے۔

بابراعظم، حسن علی، محمد رضوان اور شاہین شاہ آفریدی کو کٹیگری اے میں شامل کیا گیا ہے۔ اظہر علی، فہیم اشرف، فخر زمان، فواد عالم، شاداب خان اور یاسر شاہ کیٹیگری بی میں شامل ہیں۔عابد علی، امام الحق، حارث رؤف، محمد حسنین، محمد نواز، نعمان علی اور سرفراز احمد کو کیٹیگری سی میں شامل کیا گیا ہے۔عمران بٹ ، شاہنواز دھانی اور عثمان قادر ایمرجنگ کیٹیگری میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ اسد شفیق، شان مسعود، محمد عباس سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔حارث سہیل، افتخار احمد، عماد وسیم، عثمان شنواری کو بھی سنٹرل کنٹریکٹ نہ ملا۔  نسیم شاہ، حیدر علی بھی سنٹرل کنٹریکٹ سے محروم رہ گئے ہیں۔سابق کپتان اظہر علی کی اے سے بی کٹیگیری میں تنزلی۔ سابق کپتان سرفراز احمد بی سے سی کٹیگیری میں آگئے۔  فواد عالم کی سی سے بی کٹیگیری میں ترقی ہوئی ہے۔قومی کرکٹر کے ماہانہ معاوضے میں پچیس25 فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے۔

XTEMOS ELEMENT

CAROUSEL OF POSTS