موسم

اداکارہ صبورعلی نے اداکارعلی انصاری کو اپنا شریک حیات چن لیا۔شوبز انڈسٹری سے وابستہ معروف جوڑی نے سوشل میڈیا پر تصویر شیئر کی جس میں دونوں فنکار گلے میں ہار ڈالے خاصے خوش دکھائی دے رہے ہیں۔سوشل میڈیا پر علی انصاری کے ساتھ تصویر شیئر کرتے ہوئے صبور علی نے لکھا کہ’ ’بات پکی‘ ہماری فیملی کی نیک تمناﺅں کے ساتھ میں ایک حیرت انگیز شخص کے ساتھ زندگی کا نیا سفر شروع کرنے جارہی ہوں، الحمدللہ۔خوشی کے اس موقع پر اداکار علی انصاری بھی پیچھے نہ رہے ، انہوں نے بھی سوشل میڈیا پر صبورعلی کے ساتھ تصویر شیئر کی اور لکھا کہ ’بات پکی‘ اس وقت میرے ملے جلے جذبات ہیں لیکن سب سے اہم بات یہ ہے کہ میں خوش ہوں۔ علی انصاری نے صبور علی کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ زندگی میں اب کبھی آ پ کو کوئی سفر تنہا نہیں کرنا پڑے گا۔
اس موقع پر علی انصاری نے قرآن پاک کی ایک آیت کا ترجمہ ”اور ہم نے سب سے جوڑے بنائے تاکہ تم ایک دوسرے کو یاد رکھ سکو“ بھی شیئر کیا۔ سوشل میڈیا صارفین کی طرف سے جوڑے کے لیے مبارکباد اور مستقبل کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ ظہیر خان نے لکھا کہ میرے لئے بڑی اور حیران کن نیوز ہے، دعا ہے کہ اللہ تعالی دونوں کو خوش رکھے

سوبر اور علی انصاری

اداکارہ صبورعلی نے اداکارعلی انصاری کو اپنا شریک حیات چن لیا۔شوبز انڈسٹری سے وابستہ معروف جوڑی نے سوشل میڈیا پر تصویر شیئر کی جس میں دونوں فنکار گلے میں ہار ڈالے خاصے خوش دکھائی دے رہے ہیں۔سوشل میڈیا پر علی انصاری کے ساتھ تصویر شیئر کرتے ہوئے صبور علی نے لکھا کہ’ ’بات پکی‘ ہماری فیملی کی نیک تمناﺅں کے ساتھ میں ایک حیرت انگیز شخص کے ساتھ زندگی کا نیا سفر شروع کرنے جارہی ہوں، الحمدللہ۔خوشی کے اس موقع پر اداکار علی انصاری بھی پیچھے نہ رہے ، انہوں نے بھی سوشل میڈیا پر صبورعلی کے ساتھ تصویر شیئر کی اور لکھا کہ ’بات پکی‘ اس وقت میرے ملے جلے جذبات ہیں لیکن سب سے اہم بات یہ ہے کہ میں خوش ہوں۔ علی انصاری نے صبور علی کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ زندگی میں اب کبھی آ پ کو کوئی سفر تنہا نہیں کرنا پڑے گا۔
اس موقع پر علی انصاری نے قرآن پاک کی ایک آیت کا ترجمہ ”اور ہم نے سب سے جوڑے بنائے تاکہ تم ایک دوسرے کو یاد رکھ سکو“ بھی شیئر کیا۔ سوشل میڈیا صارفین کی طرف سے جوڑے کے لیے مبارکباد اور مستقبل کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ ظہیر خان نے لکھا کہ میرے لئے بڑی اور حیران کن نیوز ہے، دعا ہے کہ اللہ تعالی دونوں کو خوش رکھے

سعودی عرب روز میلہ

سعودی عرب کے تاریخی شہر۔۔۔۔۔۔ طائف میں گلاب فیسٹیول کا انعقادکیاگیا جس میں آرٹ گیلری کے علاوہ وسیع میدان میں راستوں کو گلاب کے پھولوں اورجگمگاتی روشنیوں سےسجایا گیا سعودی وزارت ثقافت کی جانب سے تاریخی شہرطائف کے مقامی پارک میں ” طائف گلاب کا شہر ” کے نام سے فیسٹیول جاری ہے ۔
فیسٹیول میں وسیع و عریض پارک کے تمام راستوں کو گلاب کے پھولوں سے نہایت دلکش انداز میں سجایا گیا ۔
گلاب سے بنے مختلف ماڈلز بھی پیش کیے گئے جبکہ آرٹ گیلری کے ذریعے فیسٹیول میں شریک ہونے والے افراد کی دلچسپی کو بڑھایا گیاسعودی عرب کے تاریخی شہر طائف میں گلاب فیسٹیول راستوں کو گلاب کے پھولوں اور جگمگاتی روشنیوں سے سجایا گیا
فیسٹیول میں گلاب سے بنے مختلف ماڈلز بھی پیش کیے گئے آرٹ گیلری کے ذریعے فیسٹیول میں شریک افراد کی دلچسپی

آزادی کا دن

دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی آج آزادی صحافت کا دن منایا جارہا ہے،،، یہ دن دنیا بھر کے صحافیوں کے حقوق اور اظہار رائے کی آزادی کے اعادہ کے لیے منایا جاتا ہے،دنیا بھر میں آزادی صحافت کا عالمی دن منایا جارہا ہے دن کی مناسبت سےشعبہ صحافت سے وابستہ مختلف تنظیموں کےزیراہتمام پیشہ وارانہ ذمہ داریوں کی ادائیگی کے دوران اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے صحافیوں کو خراج عقیدت پیش کیا جارہا ہے،،،انٹرنیشنل فیڈریشن آف جرنلٹس کے مطابق 1990سے 2020کے دوران پاکستان میں 138صحافیوں کو اپنے فرائض کی انجام دہی کے دوران قتل کر دیا گیا۔ پاکستان میں صحافیوں کے خلاف جرائم میں اضافہ گیارہ ستمبر 2001کے بعد ہوا۔ فریڈم نیٹ ورک پاکستان نے اپنی حالیہ رپورٹ میں بتایا کہ مئی 2020سے اپریل 2021تک پاکستان میں صحافیوں پر 148حملے ہوئے جو گزشتہ سال کی نسبت 40فیصد زیادہ ہیں،،، صحافیوں پر سب سے زیادہ حملے اسلام آباد، اس کے بعد صوبہ سندھ اور پھر صوبہ پنجاب میں ہوئے۔ رپورٹ میں اسلام آباد کو صحافیوں کیلئے خطرناک ترین شہر قرار دیا گیا ہے۔غیرسرکاری تنظیم پاکستان پریس فاؤنڈیشن کی رپورٹ کے مطابق گذشتہ سال جہاں صحافیوں کا قتل، جسمانی تشدد، غیر قانونی حراست، دھمکیاں اور گرفتاریاں جاری رہیں، وہیں میڈیا کے مواد کو براہِ راست کنٹرول کرنے کی کوششوں میں بھی اضافہ ہوا۔

پاکستانی افرات زر

پاکستان میں افراطِ زر کی سطح بلند ہورہی ہے۔ اپریل میں افراط زر 11.1 فیصد رہا اور اسی مناسبت سے اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا۔پاکستان جیسی معیشت میں جہاں حقیقی پیداواری شعبوں کی کمی ہے اور معیشت ریئل اسٹیٹ، کنزیومر فنانس وغیرہ جیسے شعبوں پر پروان چڑھتی ہے وہاں مہنگائی کا ہونا نہ صرف یقینی ہے بلکہ وہاں اقتصادی اہداف بھی افراطِ زر کے ذریعے ہی حاصل کیے جاتے ہیں۔ افراطِ زر سے جڑی نمو نہ ہو تو پاکستان میں وزیرخزانہ کے لیے اقتصادی ترقی دکھانا بہت مشکل ہوجائے گا۔ یہی وجہ ہے کہ وزرائے خزانہ اور مالیاتی پالیسی ساز اس وقت تک افراطِ زر یعنی مہنگائی کو کنٹرول کرنا نہیں چاہتے جب تک کہ یہ قابو سے باہر نہ ہوجائے۔کنزیومر پرائس انڈیکس ٹریکنگ اوربنیادی اجناس کی قیمتوں کا تعین وفاقی اور صوبائی سطح پر اور اس کا نفاذ بڑے شہروں میں ہوتا ہے۔ چھوٹے چھوٹے اور دورافتادہ دیہات اور قصبوں میں ان قیمتوں کا اطلاق کیسے یقینی بنایا جائے؟ اس کا واحد راستہ شفاف اور دیانت دارانہ پرائس مجسٹریسی سسٹم ہے۔ افراطِ زر یا مہنگائی پاکستان کا بنیادی سماجی معاشی مسئلہ ہے جس کا توڑ جامع سماجی معاشی رسپانس اور شفاف و دیانت دارانہ مکینزم کے نفاذ کے ذریعے کرنا بہت ضروری ہے۔

جہانگیر ترین

تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کا کہنا ہےکہ وزیراعظم سے ان کے دوستوں کی ملاقات اچھی رہی، وزیراعظم نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ خود ان معاملات کو دیکھیں گے لاہور کی عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہا کہ میرا کیس کرمنل نہیں، اس میں ایف آئی اے کا کوئی کردار نہیں ہے کیونکہ یہ بزنس ایشو ہے اس میں پبلک فنڈ کا کوئی استعال نہیں اور نہ کوئی سیکرٹ اکاؤنٹ نہیں لہٰذا امید ہے علی ظفر اچھی طرح دیکھ کر وزیراعظم کو بتائیں گے۔وزیراعظم سے اپنے ساتھیوں کی ملاقات سے متعلق انہوں نے کہا کہ وزیراعظم سے میرے دوستوں کی ملاقات ہوئی تھی جو اچھی رہی ہے، ہمارے لوگوں نے بھی کھل کر باتیں کیں، جو تحفظات تھے ان سے آگاہ کیا، وزیراعظم نے نے یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ خود ان معاملات کو دیکھیں گے اور کہا ہےکہ انصاف ہونا چاہیے۔جہانگیر ترین کا کہنا تھاکہ میرے کیس کی کوئی حقیقت نہیں، سب کو صاف معلوم ہو رہا ہے کہ یہ جو کیس ہو رہے ہیں اس کی بنیاد کچھ اور ہے، ہم تفتیش سے نہیں بھاگتے، ایک سال سے تفتیش ہورہی ہے، ہزاروں نہیں لاکھوں دستاویزات دیے ہیں، میری کمپنی کے لوگوں نے 100 پیشیاں بھگتی ہیں، اس کیس کا کوئی حل نکلے گا جب کہ ہم نے کبھی نہیں کہا کہ کیس ختم کردو، ہم چاہتے ہیں کہ پوری طرح تفتیش ہو تاکہ عوام بھی دیکھیں ہم ٹھیک سرخرو ہوئے ہیں۔شاہ محمود کے بیان سے متعلق انہوں نے کہا کہ اس پر کوئی بات نہیں کروں گا، یہ ہلکی بات ہے اور ہم لوگوں کو ہلکی بات کرنا زیب نہیں دیتا۔جہانگیر ترین نے مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی سے رابطوں کی بھی بھی تردید کی

اکررا یاسر بیبی برتھ اینکومنٹ

اداکارہ اقرا عزیز اور یاسر حسین نے خوشخبری سناتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے گھر بہت جلد ننھے مہمان کی آمد متوقع ہے۔ اقرا عزیز نے بھی اپنی اور یاسر حسین کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ وہ دونوں رواں سال جولائی میں والدین بن جائیں گے
دسمبر 2019 میں شادی کے بندھن میں بندھنے والی پاکستان شوبز کی خوبصورت جوڑی اقرا عزیز اور یاسر حسین نے سوشل میڈیا ایپ انسٹاگرام پر خوشخبری سنائی ہے کہ دونوں بہت جلد والدین کے عہدے پر فائز ہونے والے ہیں۔
یاسر حسین نے اپنی اور اقرا کی ایک خوبصورت تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ’’اللہ ہمیشہ ہی ہم پر مہربان رہا ہے اور اس بار تو اس کی کرم نوازی بے مثال ہے۔ اولاد اللہ کا خوبصورت تحفہ ہے۔ الحمد اللہ ہم بہت خوش ہیں اور امید کرتے ہیں کہ آپ بھی ہمیں اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں گے۔‘
اقرا عزیز نے بھی اپنی اور یاسر حسین کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ وہ دونوں رواں سال جولائی میں والدین بن جائیں گے۔

ہسان علی فواد خان بابر ازم

حسن علی اور فواد عالم کے عمدہ کھیل پر کپتان بابر اعظم خوشی سے سرشار ہیں۔ ہرارے ٹیسٹ کی جیت سے کھلاڑیوں کے اعتماد میں اضافہ ہوا ہے،اگلے میچ میں بھی کامیابی سے سیریز اپنے نام کرنے کی کوشش کریں گے۔زمبابوے کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں اننگز کی فتح کے بعد کپتان بابر اعظم نے کہاکہ پہلے سیشن میں بولرز نے اچھی بولنگ کی، پہلی اننگز میں زمبابوے کو جلد آؤٹ کرنا اچھا ثابت ہوا، حسن علی نے بہترین بولنگ کی،فواد عالم نے غیرمعمولی پرفارمنس سے اچھا اختتام کیا، اب ہم چند دن آرام کے بعد پچ کو دیکھ کر اگلے میچ کے لیے کمبی نیشن تشکیل دیں گے۔دوسری جانب مین آف دی میچ حسن علی نے میچ کے بعد ورچوئل میڈیا کانفرنس میں کہا کہ جس کھلاڑی کو طویل طرز کی کرکٹ کھیلنی ہے تو اسے فرسٹ کلاس میچز میں حصہ لینا ہوگا، طویل فارمیٹ کی کرکٹ آپ کو مضبوط بناتی اور ایک اچھا کھلاڑی بننے میں مدد دیتی ہے،جب میرا نام قائد اعظم ٹرافی کے لیے آیا تو کوچز شاہدانور اور سمیع نیازی سے بات کی کہ قومی ٹیم میں واپس آنا ہے، انھوں نے بہت سپورٹ کیا، پہلی بار لگاتار9 فرسٹ کلاس میچز کھیلے،چار روزہ کرکٹ نے فٹنس، ردھم اور اعتماد سب کچھ دیا، یہی وجہ ہے کہ کارکردگی کاگراف بلند سے بلند ہورہا ہے۔
انھوں نے کہا کہ ہرارے ٹیسٹ کی جیت سے کھلاڑیوں کے اعتماد میں اضافہ ہوا ہے،اگلے میچ میں بھی کامیابی سے سیریز اپنے نام کرنے کی کوشش کریں گے۔
ایک سوال پر حسن علی نے کہا کہ جشن کے اندازسے انجری نہیں ہوتی بلکہ انرجی ملتی ہے،پرستار بھی اس انداز کو پسند کرتے ہیں۔

فردوس سیالکوٹ سستا بازار

پنجاب میں وزیر اعلیٰ کی اہم معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان اور بیورو کریسی کی بدتمیزی کا شکار ہونے لگی ۔۔ سیالکوٹ میں فردوس عاشق اعوان نے غفلت برتنے پر اسسٹنٹ کمشنر کی سرزنش کی پہلے تو سونیا صد ف نامی سرکاری افسر مسلسل زبان چلاتی رہیں ۔ پھر چیف سیکریٹری نے الٹا چور کوتوال کو ڈانٹے کے مصداق ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے شکایت کردی۔سوشل میڈیا پر افسر شاہی کو تنقید بنایا جارہا ہے اور فردوس عاشق اعوان کے اس اقدام کو سراہا بھی جارہا ہے۔ کہ بیورو کریسی عوام کو جواب دہ ہے ۔ اور ۔ سہولتیں فراہم کرنے کی ذمے دار ہےوزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی معاون خصوصی برائے اطلاعات سیالکوٹ میں رمضان بچت بازار کا معائنہ کرنے پہنچیں تو فروخت کےلئے رکھے گئے گلے سڑے پھل دیکھ کر بھڑک اٹھیں،فردوس عاشق عوان بازار میں موجود اسسٹنٹ کمشنر سونیا صدف پر برس پڑیں فردوس عاشق اعوان کے سخت رویہ پر اسسٹنٹ کمشنر نے احتجاج کیا اور بازار سے چلی گئیں ۔ واقعے کے بعد چیف سیکریٹری پنجاب جواد رفیق ملک اسسٹنٹ کمشنر کی حمایت میں میدان میں آگئے اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے ان کی معاون خصوصی کے رویہ کی شکایت کردی ۔چیف سیکریٹری پنجاب کا کہنا ہے کہ انتظامی افسران عوام کی سہولت کیلئےفیلڈمیں ہیں کسی کو یہ زیب نہیں دیتاوہ سرکاری افسران کی تذلیل کرے۔پنجاب میں وزیر اعلیٰ کی اہم معاون اور بیورو کریسی آمنے سامنے
سیالکوٹ میں فردوس عاشق اعوان کی غفلت برتنےپراسسٹنٹ کمشنر کی سرزنش سونیاصدف نامی سرکاری افسر مسلسل زبان چلاتی رہیں چیف سیکریٹری نےوزیراعلیٰ پنجاب الٹی شکایت بھی کردی سوشل میڈیاپرفردوس اعوان کےاقدام کو سراہا جانے لگآ

FBR

ایف بی آرنے رواں مالی سال 2020-21 کے پہلے دس ماہ جولائی تا اپریل کل3780ارب روپے کی خالص ٹیکس وصولیاں حاصل کی ہیں جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 14 فیصد زیادہ ہیں۔فیڈرل بور ڈ آف ریونیو نے رواں مالی سال کے پہلے دس ماہ میں حاصل کردہ محصولات کی ابتدائی تفصیلات جاری کر دیں، 3780 ارب روپے کا نیٹ ریونیو اس عرصہ کے مقر ر کردہ ہدف3637 ارب روپے سے143 ارب زائد ہے۔ پچھلے سال اس عرصہ کے حاصل کردہ نیٹ ریونیو3320ارب روپے کے مقابلے میں14فیصد اضافہ حاصل ہوا ہے۔ایف بی آر نے ماہ اپریل کے اعدادو شمار بھی جاری کر دیئے ہیں ، ماہ اپریل میں ریونیو نیٹ کولیکشن384ارب روپے رہا جبکہ مطلوبہ اضافہ 242 ارب روپے تھا، مقرر کردہ ہدف کے مقابلے میں159 فیصد اضافہ حاصل ہو ااور پچھلے سال اپریل کے حاصل کردہ نیٹ ریویونیو240ارب روپے کے مقابلے میں57 فیصد اضافہ حاصل ہوا۔پچھلے سال کے مقابلے میں اپریل میں57 فیصد اضافہ تاریخی ہے جو مارچ میں حاصل کردہ 46 فیصد اضافہ سے بھی زائد ہے جبکہ اپریل کے آخری دن کے اختتام تک اور بک ایڈجسٹمنٹ کی مد میں حاصل وصولیوں کے بعدمحصولات کی تعداد میں مزید اضافہ متوقع ہے۔رواں مالی سال کے دس ماہ میں گراس ریونیو پچھلے سال کے 3438 ارب روپے کے مقابلے میں3976 ارب روپے رہا اور16فیصد اضافہ حاصل ہوا،اب تک 195ارب روپے کے ریفنڈز جاری کئے جا چکے جو کہ پچھلے سال اس عرصہ میں 118ارب روپے تھے۔اس سال اب تک ریفنڈز کے اجراء میں65فیصد اضافہ حاصل ہوا ہے،ریفنڈز کی تیز تر ادائیگی اس بات کا ثبوت ہے کہ ایف بی آر مختلف صنعتوں کو درپیش لیکویڈیٹی مسائل کو حل کرنے میں کوشاں ہے۔ یکم مئی2021ء تک ٹیکس سال2020ء کے لئے انکم ٹیکس گوشوارے داخل کرنے والوں کی تعداد29 لاکھ ہو چکی ہے جو کہ پچھلے سال اس عرصہ تک26 لاکھ تھی۔اس طرح ٹیکس گوشوارے داخل کرنے والوں کی تعداد میں 12فیصد اضافہ حاصل ہوا ہے۔