زییا لانگو ہوٹل

وزیر داخلہ بلوچستان میر ضیاءاللہ لانگو نے کہا ہے کہ یہ کہنا قبل از وقت ہوگا کہ پارکنگ میں بم دھماکے کا ہدف چینی سفیر تھے۔ چینی سفیر اس وقت کوئٹہ میں ہیں اور دھماکے کے وقت وہ کوئٹہ کینٹ میں تھے، ان کے حوصلے بلند ہیں اور انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کوئٹہ دھماکے کے بعد جائے وقوعہ پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ بلوچستان نے کہا کہ چینی سفیر اس وقت کوئٹہ میں ہیں اور دھماکے کے وقت وہ کوئٹہ کینٹ میں تھے، ان کے حوصلے بلند ہیں اور انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ آج معمول کے مطابق اپنی مصروفیا ت جاری رکھیں گے۔۔۔انہوں نے کہا کہ دشمن کی مسلسل کوشش ہے کہ وہ دہشتگردی کے واقعات کرکے انتشار پھیلائے لیکن صوبے بھر میں سکیورٹی ہائی الرٹ ہے، سکیورٹی فورسز نے بہت سے دہشت گرد پکڑے اور کئی مقابلوں میں ہلاک ہوئے ہیں۔صوبائی وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ ہمارے اپنے لوگ دشمنو ں کے ساتھ ملے ہوئے ہیں جن کی وجہ سے دہشتگرد اپنے عزائم میں کامیاب ہوئے۔

مکہ مکرمہ میں خواتین کی پولیس

سعودی عرب میں پہلی بار حج اور عمرے کے دوران مسجد الحرام میں سیکیورٹی کے انتظامات کے لیے خاتون عسکری اہل کاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق سعودی حکومت نے مسجد الحرام میں آنے والی خواتین کی چیکنگ اور نگرانی کے لیے خواتین اہلکاروں کی تعیناتی کا فیصلہ کیا گیا تھا جس پر اب عمل درآمد شروع ہوگیا ہے۔
سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر سعودی وزارت داخلہ نے خاتون سیکیورٹی اہلکاروں کی حرم شریف میں ذمہ داریاں نبھاتے ہوئے تصاویر شیئر کیں اور کیپشن میں لکھا کہ حج و عمرہ کے دوران سیکیورٹی کے فرائض خواتین عسکری اہل کار بھی انجام دے رہی ہیں۔کورونا وبا کے دوران خواتین نمازیوں اور معتمرین سے ایس او پیز پر عمل درآمد کرانا مرد اہلکاروں کے لیے مشکل ہو رہا تھا جس پر خواتین اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ خواتین زائرین کی سیکیورٹی اور احتیاطی اقدامات کی ذمہ داری بھی انہی اہلکاروں پر ہوگی۔واضح رہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے وژن 2023 کے تحت مملکت میں خواتین کو خودمختار بنانے کی پالیسی پر عمل کیا جا رہا ہے جب کہ سیکیورٹی کے شعبے کے لیے بھی خواتین کو تربیت دی جا رہی ہے۔

موسم

وفاقی دارالحکومت میں مطلع جزوی ابر آلود رہنے کے علاوہ تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ ہلکی بارش کا امکان،کراچی کا موسم جزوی ابر الود کے ساتھ ساتھ گرم اور مرطوب رہے گا، ہوا میں نمی کا تناسب 37 فیصد ریکارڈ کراچی میں ہوا میں نمی کا تناسب 37 فیصد ہے، جب کہ شہر میں مغربی سمت سے چلنے والی ہواؤں کی رفتار صبح کے اوقات میں 26 کلو میٹر فی گھنٹہ ریکارڈ کی گئی۔آج کراچی کا زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 33-35 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا، جو صبح کے اوقات میں 30 ڈگری سینٹی گریڈ تھا۔ شہر کا کم سے کم درجہ حرارت 25ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔اسلام آباد کے موسم سے متعلق ادارے کا کہنا ہے کہ وفاقی دارالحکومت میں مطلع جزوی ابر آلود رہنے کے علاوہ تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ شام / رات میں ہلکی بارش کا امکان ہے۔منگل کے روز پنجاب، خیبر پختو نخوا، کشمیر، گلگت بلتستان، مشرقی بلوچستان اور بالائی سندھ میں مطلع ابر آلود رہنے کے علاوہ تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ ہلکی بارش کا امکان ہے۔ منگل کے روز بلوچستان کے علاقے بارکھان اور اس کے گرد و نواح میں گرج چمک کے ساتھ ہلکی بارش کی پیش گوئی کی گئی ہے۔بدھ کے روز شمال مشرقی پنجاب، کشمیر اور گلگت بلتستان میں مطلع ابر آلود رہنے کے ساتھ تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ ہلکی بارش کا امکان ہوگا۔

شیخ رشید اور سعد رضوی

وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ سعد رضوی کی رہائی نہیں ہوئی بلکہ وہ 302 اور 7 اے ٹی اے کے تحت گرفتار ہیں۔ سعدرضوی سمیت 210 ایف آئی قانونی مرحلے سے گزریں گی، ٹی ایل پی کو انسداد دہشتگردی ایکٹ کے تحت کالعدم قرار دیا گیا ہے، ٹی ایل پی سیاسی جماعت ہے اور 2018 کے انتخابات میں پنجاب کی تیسری بڑی پارٹی تھی، ان کے پاس اپیل کا حق موجود ہے، اور وہ 30 روز میں اپنا جواب داخل کراسکتے ہیں۔اسلام آباد مین پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ گزشتہ دنوں جو کچھ ہوا اس لڑائی میں سوشل میڈیا کا استعمال ہوا، سوشل میڈیا کا اصل مقصد پاکستان کے امن کوتباہ کرنا تھا، ساری صورتحال میں بھارت سے دو دو لاکھ لوگ آن لائن تھے، بھارت ہمیں فیٹف میں خراب کرنا چاہتا ہے، ہماری افواج نے جانوں کا نذرانہ دے کر دہشت گردی ختم کی، سوشل میڈیا نے جو کیا اس کا جائزہ لیا جارہا ہے۔وزیرداخلہ نے کہا کہ سعد رضوی کی ابھی رہائی نہیں ہوئی، وہ 302 اور 7 اے ٹی اے کے تحت گرفتار ہیں، اور ٹی ایل پی نے کسی کی رہائی کی بات بھی نہیں کی، سعدرضوی سمیت 210 ایف آئی قانونی مرحلے سے گزریں گی، ٹی ایل پی کو انسداد دہشتگردی ایکٹ کے تحت کالعدم قرار دیا گیا ہے، ٹی ایل پی سیاسی جماعت ہے اور 2018 کے انتخابات میں پنجاب کی تیسری بڑی پارٹی تھی، ان کے پاس اپیل کا حق موجود ہے، اور وہ 30 روز میں اپنا جواب داخل کراسکتے ہیں۔
شیخ رشید کا کہنا تھا کہ سراج الحق نے مذاکرات کامشور ہ دیا ان کا مشکور ہوں، لیکن مولانا فضل الرحمان نے سمجھا کہ شاید ان کی لاٹری نکل آئی ہے، جو بھی کرتے ہیں ان کو الٹا پڑتاہے، 20 اپریل کو 7 گھنٹے ٹی ایل پی کے ساتھ مذاکرات کے بعد معاملات طے پا گئے، اور اسی روز قومی اسمبلی کا خصوصی اجلاس بلایا گیا، قرارداد میں فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے پر بحث بھی شامل تھی، لیکن شاہد خاقان عباسی نے غلط الفاظ استعمال کئے وہ لگتے نہیں کہ وزیراعظم رہے ہیں، اپنی سیاسی زندگی کے سب سے نازیبا الفاظ دیکھے۔
وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ ایسا قانون لاناچاہتے ہیں جو کسی کے فرقے کو چھیڑے نہیں اور اپنا فرقہ چھوڑے نہیں، محرم، عید میلاد النبی سمیت تمام ایونٹ پر مسائل پیدا ہوتے ہیں، سوشل میڈیا کے ذریعے پاکستان کے استحکام کو تباہ کرنے کی کوشش کی گئی، پولیس اور رینجرز نے سارے معاملے میں زبردست کام کیا، بھارت اور دیگر امن دشمن ممالک ہمیں فیٹف کے بلیک لسٹ میں دیکھنا چاہتے ہیں، کوشش کریں گے کوئی ایک پالیسی لائیں، جو شخص قانون کو ہاتھ میں لے گا قانون اسے ہاتھ میں لے گا۔
برطانوی ہائی کمشنر سے بات ہوئی ہے اور کہا ہے نوازشریف کو پاکستان واپس بھیج دیں اور انہیں ریڈ لسٹ میں شامل کریں، ہم نے برطانوی کمشنر سے کہا کہ ہم جانوں کی قربانیاں دے رہے ہیں، برطانیہ نے نوازشریف کی واپسی کے حوالےسے کوئی مثبت جواب نہیں دیا۔

روسیا صدر امریکہ

روسی صدر ولا دیمیر پوٹن نے کہا ہے کہ اگر مغرب نے ’ریڈ لائن‘ عبور کی تو روس بلا تاخیر بہت سخت ردعمل دے گا۔روسی صدر کا یہ بیان قوم سے سالانہ خطاب میں اس وقت سامنے آیا ہے جب روس کی پیوٹن کے ناقد الیکسی ناوالنی کو جیل بھیجنے، امریکی صدارتی الیکشن میں روسی مداخلت کے الزامات اور یوکرائن کے معاملے پر مغرب کے ساتھ کشیدگی چل رہی ہےقوم سے خطاب میں انہوں نےیوکرائن، بیلاروس اور روس میں عدم استحکام کا موردِ الزام مغرب کو ٹہرایا۔ پوٹن کا کہنا تھا کہ مغربی طاقتیں مستقل روس کو پریشان کرنے کی کوششیں کر رہی ہیں۔روس پر پابندیاں امریکا میں ہونے والے سائبر حملوں اورصدارتی انتخابات میں مداخلت کے جواب میں عائد کی گئی ہیں۔ امریکی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ سولر ونڈز کے نام سے مشہور ہیکنگ کی اس کارروائی میں روسی ہیکرز نے بڑے پیمانے پر نقصان دہ کوڈز کے ساتھ سافٹ ویئرز استعمال تھے جس سے انہیں امریکا کی کم از کم نوایجنسیوں کے نیٹ ورک اور خفیہ معلومات تک رسائی ملی تھی۔روسی صدر کا یہ بیان قوم سے سالانہ خطاب میں اس وقت سامنے آیا ہے جب روس کی پیوٹن کے ناقد الیکسی ناوالنی کو جیل بھیجنے، امریکی صدارتی الیکشن میں روسی مداخلت کے الزامات اور یوکرائن کے معاملے پر مغرب کے ساتھ کشیدگی چل رہی ہے۔ولا دیمیر پوٹں نے قوم سے خطاب میں روس میں کورونا کے خلاف جنگ اور ملک کی معاشی بہتری کے منصوبوں کا بھی ذکر کیا۔

ریلوے ایم ایل 1 پلان

وفاقی حکومت نے ریلوے کے ایم ایل ون منصوبے پر عمل درآمد کے لیے 6 ارب ڈالر قرض کے لیے چینی بینک سے رابطہ کر لیا۔
ایم ایل ون منصوبے کی تکمیل سے مسافر ٹرینوں کی رفتار بڑھ کر 160 کلومیٹر فی گھنٹہ ہو جائےگی جبکہ کراچی تا لاہور سفر کا دورانیہ 18 گھنٹے سے کم ہو کر 10 گھنٹے رہ جائے گا۔ریلوے حکام کے مطابق پاک چین جوائنٹ کوآرڈی نیشن کمیٹی کا اجلاس اسی ماہ متوقع ہے جس میں سی پیک منصوبوں پر عمل درآمد کا معاملہ زیر بحث آئے گا۔ریلوے حکام پُرامید ہیں کہ اس اجلاس میں ایم ایل ون منصوبے کے لیے ٹینڈر جاری کرنے کی منظوری بھی مل جائےگی۔حکام کے مطابق ایم ایل ون منصوبے کے تحت کراچی سے پشاور اور ٹیکسلا سے حویلیاں تک 1872کلو میٹر کا پھاٹک فری نیا ریلوے ٹریک بچھایا جائے گا۔منصوبے کی لاگت کا تخمینہ 6.8 ارب ڈالر لگایا گیا ہے، چھ ارب ڈالر کا قرض چینی بینک فراہم کرے گا جبکہ باقی اخراجات پاکستان خود برداشت کرے گا۔ریلوے حکام کا کہنا ہے کہ ایم ایل ون منصوبے سے روزگار کے 24 ہزار مواقع پیدا ہوں گے، ایم ایل ون منصوبے میں حویلیاں کے قریب نئی ڈرائی پورٹ کی تعمیر اور لاہور میں ریلوے ٹریننگ اکیڈمی کی اپ گریڈیشن بھی شامل ہے۔

کوئٹہ بلیسٹ شیخ رشید

کوئٹہ میں ہونے والے دھماکے کے حوالے سے وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا رد عمل سامنے آیا ہے۔کوئٹہ کا ایک محفوظ ترین علاقہ ہےغیرملکی بھی اسی ہوٹل میں ٹھہرتے ہیں۔ ملک دشمن عناصر ملک کا امن تباہ کرنا چاہتے ہیں شیخ رشید کا کہنا ہے کہ یہ کوئٹہ کا ایک محفوظ ترین علاقہ ہے، سیکیورٹی کی کسی قسم کی بریچ ہوئی تب ہی گاڑی اندرپہنچی ہے، دھماکا خیز مواد گاڑی میں موجود تھا۔شیخ رشید نے کہا کہ غیرملکی بھی اسی ہوٹل میں ٹھہرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک دشمن عناصر ملک کا امن تباہ کرنا چاہتے ہیں، دہشتگرد اپنے انجام کو پہنچیں گے، بھارت پاکستان میں امن نہیں چاہتا۔وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھاکہ کوئٹہ، پشاور، کراچی، اسلام آباد اور راولپنڈی میں اس قسم کے حملے کے خدشات تھے، ہوٹل کی سیکیورٹی بالکل ٹھیک ہے، ایک دو اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

پیٹرولیم

وزارت توانائی پٹرولیم ڈویژن کے ذیلی ادارے ڈیپارٹمنٹ آف ایکسپلویس میں جعلی لائسنس جاری کیے جانے کا انکشاف ہواہے۔
ڈپارٹمنٹ آف ایکسپلویس کے 2 افسران کو اپنی ذمے داریوں سے غفلت اور محکمنہ بے ضابطگی پر نوکریوں سے فارغ کر دیا گیا، ڈپٹی ڈائریکٹر اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر کمپنیوں کو جعلی لائسنس جاری کرتے رہے ہیں۔اسٹنٹ ڈائریکٹر نے حفاظتی اصولوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے 3 آئل ٹرمینلز کو جعلی لائسنس جاری کیے جبکہ ڈپٹی ڈائریکٹر ڈپارٹمنٹ آف ایکسپلوزو نے پبلک سیفٹی کو نظرانداز کرتے ہوئے 13 آئل ٹرمینلز کوجعلی لائسنس جاری کیے۔

پاک ایران

نیوزی لینڈ میں ’’ڈائنگ آرٹ‘‘ نامی ایک ادارے کی وجہ شہرت وہاں بنائے جانے والے خوبصورت اور دیدہ زیب تابوت ہیں،لیکن تابوت کس مقصد کے تحت بنائے جاتے ہیں،دیکھ کر آپ خود بھی دنگ رہ جائینگے،دیکھئیے اس رپورٹ میں
آکلینڈ میں واقع یہ ادارہ، راس ہال نامی ایک صاحب کی ملکیت ہے، جن کا کہنا ہے کہ کسی بھی شخص کی آخری رسوم ویسے ہی دکھ اور تکلیف کا باعث ہوتی ہیں لہذا کچھ دلچسپ اور الگ ان رسومات میں دکھ کا تاثر ختم کرنے کی کوشش کرنے میں کوئی برائی نہیں۔
دلچسپی کی بات ہے کہ مرنے والے شخص نے یہ تابوت اپنی زندگی میں ہی ’’آرڈر پر‘‘ بنوا لیا تھا کیونکہ وہ کینسر کی آخری اسٹیج پر پہنچ چکا تھا اور ڈاکٹر اسے جواب دے چکے تھے۔راس ہال کے شو روم میں گاہکوں کی توجہ کےلیے طرح طرح کے ’’ڈیزائنر تابوت‘‘ رکھے گئے ہیں جن میں ڈیری ملک چاکلیٹ، لیگو ٹوائے اور اسٹار ٹریک، رنگین پھولدار کشتیوں، آگ بجھانے والی گاڑی اور مصری ممیوں کی تھیم والے تابوتوں کے علاوہ اپنی من پسند تھیم کے حساب سے تابوت بنوانے کی سہولت بھی موجود ہے۔ان تابوتوں کے بارے میں راس ہال نے بتایا کہ یہ سب کے سب ماحول دوست اور حیاتی تنزل پذیر (بایو ڈیگریڈیبل) مادّوں سے بنائے جاتے ہیں جو زمین میں دفن کرنے کے چند مہینوں بعد ہی گل کر مٹی میں مل جاتے ہیں مشرقی ممالک کے برعکس ’’ڈیزائنر تابوتوں‘‘ کا یہ کام حصولِ ثواب کےلیے نہیں بلکہ باقاعدہ کاروبار کی حیثیت سے کیا جاتا ہے۔اگرچہ ایسے ایک تابوت کی کم از کم قیمت 2500 نیوزی لینڈ ڈالر (تقریباً ڈیڑھ لاکھ پاکستانی روپے) کے لگ بھگ ہوسکتی ہے لیکنڈیزائن کی نوعیت اور نفاست کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ بہت زیادہ بھی ممکن ہے۔یہاں میتوں کےلیے ’’ڈیزائنر تابوت‘‘ آرڈر پر تیار کیے جاتے ہیں!خوبصورت اور دیدہ زیب تابوت ہیں جو کسی بھی مرنے والے کی آخری رسومات میں خوشیوں کے رنگ بھر سکتے ہیں پاکستان اور ایران کے درمیان بین السرحدی تجارتی منڈیوں کے قیام پر مفاہمتی یادداشت(ایم او یو ) پر دستخط ہوگئے۔سرحدی مقامات پر تین تجارتی منڈیوں کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔پاک، ایران سرحد پر تجارتی مراکز کا قیام دونوں ممالک کے لیے یکساں طور مفید ثابت ہوگا ایرانی وزارتِ خارجہ میں پاکستان اور ایران کے مابین سرحدی تجارتی مراکز (Border Market places) کھولنے کے حوالے سے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی تقریب ہوئی جس میں پاکستان کی جانب سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی جب کہ ایران کی طرف سے ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے دستخط کیے۔ایم او یو کے مطابق پاکستان اور ایران کے’ بارڈر ایریاز ‘ میں 6 تجارتی مراکز کھولے جائیں گے جو کہ پاکستان کے صوبہ بلوچستان اور ایران کے صوبہ سیستان و بلوچستان کی سرحد پر قائم کیے جائیں گے۔پہلے مرحلے میں سرحدی مقامات پر تین تجارتی منڈیوں کا قیام عمل میں لایا جائے گا، تین دیگر سرحدی مقامات پر بعد میں مشترکہ بازار قائم کیے جائیں گے،ان منڈیوں کا انتظام دونوں ملکوں کے مابین طے کردہ معاہدوں اور طریقہ کار کے تحت ہوگا۔اس موقع پر شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاک، ایران سرحد پر تجارتی مراکز کا قیام دونوں ممالک کے لیے یکساں طور مفید ثابت ہوگا۔سرحدی علاقے کے مکینوں کی معاشی حالت بہتر بنانےکےلیے یہ ایک انتہائی مؤثر اقدام ہے۔
پاکستان اور ایران کے مابین بارڈر مارکیٹس کھولنے کی تجویز وزیر اعظم عمران خان نے 2019 میں اپنے دورہ ایران کے وقت ایران کے صدر روحانی کے ساتھ ملاقات کے دوران پیش کی تھی۔

نیوزی لینڈ

نیوزی لینڈ میں ’’ڈائنگ آرٹ‘‘ نامی ایک ادارے کی وجہ شہرت وہاں بنائے جانے والے خوبصورت اور دیدہ زیب تابوت ہیں،لیکن تابوت کس مقصد کے تحت بنائے جاتے ہیں،دیکھ کر آپ خود بھی دنگ رہ جائینگے،دیکھئیے اس رپورٹ میں
آکلینڈ میں واقع یہ ادارہ، راس ہال نامی ایک صاحب کی ملکیت ہے، جن کا کہنا ہے کہ کسی بھی شخص کی آخری رسوم ویسے ہی دکھ اور تکلیف کا باعث ہوتی ہیں لہذا کچھ دلچسپ اور الگ ان رسومات میں دکھ کا تاثر ختم کرنے کی کوشش کرنے میں کوئی برائی نہیں۔
دلچسپی کی بات ہے کہ مرنے والے شخص نے یہ تابوت اپنی زندگی میں ہی ’’آرڈر پر‘‘ بنوا لیا تھا کیونکہ وہ کینسر کی آخری اسٹیج پر پہنچ چکا تھا اور ڈاکٹر اسے جواب دے چکے تھے۔راس ہال کے شو روم میں گاہکوں کی توجہ کےلیے طرح طرح کے ’’ڈیزائنر تابوت‘‘ رکھے گئے ہیں جن میں ڈیری ملک چاکلیٹ، لیگو ٹوائے اور اسٹار ٹریک، رنگین پھولدار کشتیوں، آگ بجھانے والی گاڑی اور مصری ممیوں کی تھیم والے تابوتوں کے علاوہ اپنی من پسند تھیم کے حساب سے تابوت بنوانے کی سہولت بھی موجود ہے۔ان تابوتوں کے بارے میں راس ہال نے بتایا کہ یہ سب کے سب ماحول دوست اور حیاتی تنزل پذیر (بایو ڈیگریڈیبل) مادّوں سے بنائے جاتے ہیں جو زمین میں دفن کرنے کے چند مہینوں بعد ہی گل کر مٹی میں مل جاتے ہیں مشرقی ممالک کے برعکس ’’ڈیزائنر تابوتوں‘‘ کا یہ کام حصولِ ثواب کےلیے نہیں بلکہ باقاعدہ کاروبار کی حیثیت سے کیا جاتا ہے۔اگرچہ ایسے ایک تابوت کی کم از کم قیمت 2500 نیوزی لینڈ ڈالر (تقریباً ڈیڑھ لاکھ پاکستانی روپے) کے لگ بھگ ہوسکتی ہے لیکنڈیزائن کی نوعیت اور نفاست کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ بہت زیادہ بھی ممکن ہے۔یہاں میتوں کےلیے ’’ڈیزائنر تابوت‘‘ آرڈر پر تیار کیے جاتے ہیں!خوبصورت اور دیدہ زیب تابوت ہیں جو کسی بھی مرنے والے کی آخری رسومات میں خوشیوں کے رنگ بھر سکتے ہیں