headline, Pakistan

World day of Working Child

بے گھر اور معاشرے کے دھتکارے ہوئے بچوں کو کارآمد بنانے اور معاشرے کا مفید شہری بنانے کے لئے ہر سال بارہ اپریل کو اسٹریٹ چلڈرنز کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ’اسٹریٹ چلڈرن ڈے ‘یعنی بے گھر بچوں کا عالمی دن منایاجارہا ہے ۔ اس دن کے منانے کا مقصد گلیوں اور فٹ پاتھوں پر زندگی بسر کرنے والے بچوں کے حقوق کے متعلق آگاہی فراہم کرنا اور ان بے گھر بچوں کو بھی دیگر بچوں جیسی آسائشیں مہیا کرنا ہے۔ اسپیس ایسے میں راولپنڈی کے بازار میں مزدوری کرتے ننھے بچے جو قوم کا مستقبل ہیں دو وقت کی روٹی کی فکر میں پریشان ہیں۔۔اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں تقریبا بارہ کروڑ بچے گلی ، کوچوں اور فٹ پاتھوں پہ زندگی گزارتے ہیں ۔ پاکستان میں اس وقت تقریباً 27لاکھ سے زائد بچے بے گھر ہیں ۔ راولپنڈی مکینک کا کام سیکھتا کم عمر بچہ صبح کے وقت پڑھتا ہے۔اسپیس پاکستان میں بے شمار بچوں کو فکر معاش نے اسکولوں سے دور کر دیا ہے کوئی سڑکوں پر بائیک ٹھیک کرتا ہے تو کوئی پنکھے ۔ دکانوں پر کام کرنے والے یہ چھوٹے اپنے گھر کے اکثر بڑے ہوتے ہیں۔۔بے گھر بچوں کی فلاح و بہبود کے لیے گلی محلوں کی سطح پر کام کیا جانا چاہیے تاکہ بچوں کی مناسب تربیت کے ساتھ ساتھ ان کی بہتر پرورش ہو سکے۔ بے گھر اور معاشرے کے دھتکارے بچوں کا عالمی دن اسٹریٹ چلڈرن کا عالمی دن ہر سال 12اپریل کو منایا جاتا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *