International

UMRAH

سعودی حکام نے سخت ترین ایس او پیز کے تحت رواں سال رمضان المبارک میں عمرے کی ادائیگی کی اجازت دے دی ہے۔ تاہم مسجد الحرام اور مسجد نبویؐ میں اجتماعی افطاری اور اعتکاف پر پابندی برقرار رہے گی۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اس سال دنيا بھر کے مسلمان رمضان المبارک ميں عمرہ ادا کرسکيں گے۔ مطعاف میں پہلی قطار صرف بزرگوں اور معذوروں کے ليے وقف ہونگی۔سعودی حکام کے مطابق مطعاف ميں نماز کی اجازت نہیں ہوگی۔ صرف طواف کيا جاسکے گا۔ طواف کے بعد 2 رکعت نوافل پہلی منزل پر ادا کیے جاسکيں گے۔ نماز اور نفلی عبادات بيرونی صحن، پہلی منزل اور چھت پر ادا کی جاسکیں گی۔ خانہ کعبہ اور حجر اسود کو چھونے کی اجازت نہيں ہوگی۔حرمین شریفین کے سربراہ اعلیٰ ڈاکٹر عبدالرحمان السدیس کے ہدایات پر مطعاف میں لائنیں لگانے کا کام از سر نو ترتیب دیا گیا ہے۔ عبد الرحمان السدیس کا کہنا ہے کہ مملکت میں عمرہ زائرین کی بڑھتی ہوئی تعداد کو دیکھتے ہوئے ایسا کیا جارہا ہے۔ السدیس کا کہنا تھا کہ نئی نشاندہی سماجی فاصلوں کو ملحوظ رکھتے ہوئے کی جارہی ہے۔وزارت حج و عمرہ کے تیسرے مرحلے میں اندرون بیرون مملکت سے روزانہ 20 ہزار سعودی شہریوں اور مقیم غیر ملکیوں کو عمرے کی سہولت فراہم کر رکھی ہے۔عمرہ زائرین کو عالمی وبا سے بچاؤ کے انتظامات اور ایس او پیز کی پابندی کے ساتھ طواف ، سعی اور نماز ادا کررہے ہیں۔ مسجد الحرام میں آںے والے 20 ہزار عمرہ زائرین، 60 ہزار نمازی اور 19 ہزار 500 افراد مسجد نبوی کی زیارت کر رہے ہیں رمضان المبارک میں عمرہ ادائیگی،مساجد میں داخلےکیلئےاجازت نامہ لازمی قرار

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *