International, Pakistan

Election Ordinance

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے الیکشنز ترمیمی آرڈیننس دوہزار اکیس جاری کردیا جو فوری طورپرنافذالعمل ہو گا۔ اس کے تحت سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ کے ذریعے کرائے جاسکیں گے ۔۔ الیکشن کمیشن پارٹی سربراہ یا اس کے نمائندے کوووٹ دکھانے کا پابند ہوگا۔۔۔ آرڈیننس سپریم کورٹ کے صدارتی ریفرنس کی رائے سے مشروط کیا گیا ہے۔
سینیٹ کےانتخابات اب خفیہ نہیں اوپن بیلٹ سے ہوں گے۔۔ صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی نے سینیٹ انتخابات میں ترمیم کا آرڈیننس جاری کردیا۔۔۔ آرڈیننس کے تحت الیکشن ایکٹ 2017کی شق122میں ترمیم کی گئی ہے۔۔ترمیم کےبعد الیکشن کمیشن پارٹی سربراہ کی ووٹ دکھانے کی درخواست پر پارٹی سربراہ یا اس کے نمائندے کوووٹ دکھانے کا پابند ہوگا۔۔ تاہم آرڈیننس کو سپریم کورٹ کی سینیٹ انتخابات سے متعلق دائر ریفرس پر رائے سے مشروط رکھا گیا ہے۔۔الیکشن ایکٹ میں ترمیم کیلئے نئے آرڈیننس کی ڈرافٹنگ اٹارنی جنرل خالد جاوید نے کی ۔ دوسری طرف حکومت نے چیئرمین سینیٹ کا الیکشن بھی اوپن بیلٹ پر کرانے کاعندیہ دے دیاہے۔۔وزیراعظم کے معاون خصوصی برائےاحتساب شہزاد اکبر نے ایک انٹرویو میں انکشاف کیا ہے کہ ایوان بالاکے انتخاب کے بعد اگلے مرحلے میں چیئرمین سینیٹ کا الیکشن بھی اوپن بیلٹ پر کرایاجاسکتاہے۔صدر عارف علوی نے الیکشنز ترمیمی آرڈیننس 2021 جاری کردیا آرڈیننس کے تحت سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ کے ذریعے کرائے جاسکیں گے
الیکشن کمیشن پارٹی سربراہ یا اس کے نمائندے کوووٹ دکھانے کا پابند ہوگا آرڈیننس سپریم کورٹ کے صدارتی ریفرنس کی رائے سے مشروط کیا گیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *