Pakistan

BHAWALPUR DEER

بہاولپور کے چڑیا گھر میں مبینہ طور پر زہرہلا چارا کھانے سے نایاب نسل کے 7 ہرن ہلاک ہو گئے۔ذرائع کے مطابق چڑیا گھر میں نایاب نسل کے ہرن مبینہ طور پر زہریلا چارا کھانے سے ہلاک ہو گئے جبکہ 12 دیگر ہرنوں کی حالت خراب ہو گئی۔ذرائع کا بتانا ہے کہ بہاولپور کے چڑیا گھر میں ہلاک ہونے والے ہرن نایاب چیتل نسل کے ہیں۔دوسری جانب چڑیا گھر انتظامیہ کا کہنا ہے کہ درجنوں ہرن اچانک جنگلے میں تڑپنے لگے اور تھوڑی ہی دیر میں 7 ہرن دم توڑ گئے جبکہ فوری طبی امداد سے 22 ہرنوں کو بچا لیا گیا ہے اور 12 ہرن اب بھی شدید بیمار ہیں۔انتظامیہ کے مطابق چڑیا گھر کے ہرنوں کی پراسرار ہلاکت کی وجہ ابھی نہیں بتائی جا سکتی، ہلاکت کی وجہ معلوم کرنے کے لیے ان کے نمونے لاہور بھجوادیے ہیں۔کیوریٹر بہاولپور چڑیا گھر کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ ہرنوں کی ہلاکت کی وجہ پوسٹ مارٹم کے بعد ہی پتہ لگ سکے گی۔
چڑیاگھرانتطاميہ کی جانب سےبتایا گیا ہے کہ ہرنوں کی ہلاکت کی وجہ جاننا قبل ازوقت ہے،پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد ہی وجہ سامنے آئے گی۔
واضح رہے کہ پاکستان میں چڑیا گھروں کی حالت ابتر ہے۔ اسلام آباد کے مرغزارچڑیا گھر میں کاون ہاتھی کو 30 سال سے زائد عرصے ناگفتہ حالت میں رکھنے کےبعد ملک سے باہر بھیج دیا گیا۔
ادھرکراچی چڑیا گھر میں شامی نسل کا بھورےرنگ کا مادہ ریچھ 20 سالہ رانو گزشتہ 3 سال سے 25 فٹ چوڑےایک گڑھے نما پنجرے میں قید ہے۔سندھ ہائیکورٹ نےبدھ کوکیس کی سماعت کےدوران رانو کو 500 گنا بڑے پنجرےمیں رکھنے کا حکم سنایا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *