International

مساجد ایکسہ اسرائیل

مسجد اقصیٰ پر حملے کے بعد بھی اسرائیل کی مسلم دشمنی کم نہ ہوئی۔ منگل کی صبح صہیونی فورسز نے جنگی طیاروں کے ذریعے غزہ پر پھر بم برسادئیے۔خوفناک بمباری میں اب تک دس بچوں سمیت تیس بے گناہ فلسطینی شہید اور ایک سو پچیس سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔ اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے حماس کے ایک سو تیس ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جن میں پندرہ حماس کمانڈرز مارے گئے ہیں۔اسرائیلی وزیراعظم نے غزہ پر حملے جاری رکھنے کی بھی دھمکی دی ہے۔ فلسطینی صدر محمود عباس نے اسرائیلی حملوں کی مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے اسرائیلی جرائم روکنے کےلیے فوری اقدامات کا مطالبہ کیاہے۔ اسرائیلی فورسز بے لگام ۔۔ بین الاقوامی مذمت نظرانداز مسجد اقصیٰ میں سیکڑوں فلسطینیوں کو زخمی کرنے کے بعد غزہ پرخوفناک بمباری ،منگل کی صبح حملے میں خان یونس ، البوریج کیمپ اور الزیتون کے علاقوں کو نشانہ بنایاگیاشمالی غزہ میں ایک دھماکے میں تین بچوں سمیت ایک ہی خاندان کے سات افراد شہید ہوگئےاسرائیلی حملوں میں حماس سے وابستہ فلاحی تنظیم کے زیر انتظام چلنے والے ایک اسکول کو وسطی غزہ کے علاقے دیر البلح میں نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں وہ مکمل طور پر تباہ ہوگیا۔اسرائیلی فضائی حملوں میں مشرقی غزہ میں ایک پلاسٹک فیکٹری کوبھی نشانہ بنایا گیا۔غزہ کی پٹی اورخان یونس پر لاتعداد گھروں اور اپارٹمنٹس کو اسرائیلی طیاروں نے بمباری کرکے تباہ کردیا۔ ترک خبر رساں ایجنسی اناطولوکے مطابق اسرائیلی آرمی کا دعویٰ ہے کہ انہوں نے حماس کے 130 ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جن میں 15 حماس کمانڈرز مارے گئے ہیں۔
فلسطینی صدرمحمودعباس نے غزہ پر اسرائیلی حملوں کی مذمت کی ہے اور عید کی تقریبات منسوخ کردیں ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ عالمی برادری فلسطینیوں کےخلاف اسرائیلی جرائم روکنے کےلیے فوری اقدامات کرے۔

غزہ کو خون میں نہلا دینے والے اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو اب بھی بس کرنے کو تیار نہیں۔۔ انہوں نے حماس کی جوابی کارروائیوں پر غزہ میں مزید کچھ دن حملے جاری رکھنے کی دھمکی بھی دیدی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *