Pakistan

یووم ای بارڈر

غزوہ بدر، معرکہ حق و باطل،، بہادری اورعشق و سرمستی کی عظیم داستان،، جب 313مسلمانوں نے رسول اللہ کی قیادت میں خود سے تین گنا بڑے لشکرکی تمام ترمادی اورمعنوی طاقت کے غرور کوخاک میں ملا دیا۔ اورتاریخ کے صفحات پربہادری اورشجاعت کے انمٹ نقوش چھوڑے. دیکھیے یہ رپورٹ سنہ 2 ہجری17رمضان المبارک تاریخ اسلام کا وہ عظیم الشان یادگاردن،جب اسلام اور کفر کے درمیان پہلی فیصلہ کن جنگ لڑی گئی،جس میں اللہ کے مٹھی بھر نام لیواؤں کو وہ ابدی طاقت اوررشکِ زمانہ غلبہ نصیب ہوا جس پر آج تک مسلمان فخر کا اظہارکرتے ہیں
13سال تک کفار مکہ نےمسلمانوں پرظلم وستم کے پہاڑ توڑے۔ ان کا خیال تھا کہ مُٹھی بھر یہ سر پھرے بھلا ان کی جنگی طاقت کے سامنے کیسے ٹھہر سکتے ہیںاللہ کی خاص فتح ونصرت سے313 مسلمانوں نے اپنے سے تین گنا بڑے لاؤ و لشکر کو اس کی تمام ترمادی اور معنوی طاقت کے ساتھ خاک چاٹنے پرمجبور کردیا۔مقام بدرپرتین سوتیرا صحابہ کرام کا مقابلہ اسلحےسے لیس ایک ہزار کفار مکہ سے ہوا،مگر اسلامی لشکر اپنے سالار اعظم حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم پر جان چھڑکنے کو تیار تھا
غزوہ بدر کی یاد آج بھی مسلمانوں کے ایمان کو بھی تازہ کر دیتی ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *